ودہولڈنگ ٹیکس کیخلاف تاجر متحد آج صبح ملک گیر شٹرڈائون ہڑتال

September 9, 2015 1:32 pm0 commentsViews: 21

ٹیکس ختم نہ کیے جانے کی صورت میں تاجروں نے سیاسی جماعتوں کیساتھ ملکر اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کی دھمکی دیدی
کراچی میں تاجروں کی اپیل پر شہرکے تمام چھوٹے بڑے تجارتی مراکز ، شاپنگ سینٹرز اور مارکیٹیں بند ہیں، ٹرانسپورٹ بھی معمول سے کم چل رہی ہے، آج سہ پہر احتجاجی ریلیاں نکالی جائیں گی
غیرآئینی ٹیکس یا تاجروں کے ساتھ ہونے والی زیادتیاں اب مزیدبرداشت نہیں کریں گے، حکمران ہوش کے ناخن لیں، ورنہ کاروبار تاحکم ثانی بند کردیں گے، عتیق میر، جمیل پراچہ اور اقبال میمن کی مشترکہ پریس کانفرنس
کراچی( کامرس رپورٹر) مانیٹرنگ ڈیسک) بینک ٹرانزیکشن پر ود ہولڈنگ ٹیکس کے خلاف تاجر برادری متحد ہوگئی ہے آج ملک گیر شٹر ڈائون ہڑتال کی جا رہی ہے کراچی میں بولٹن مارکیٹ، صدر الیکٹرونکس مارکیٹ، بوہری بازار، طارق روڈ، حیدری مارکیٹ، صرافہ بازار سمیت تمام چھوٹے بڑے تجارتی مراکز بند ہیں جبکہ ٹرانسپورٹ بھی کم تعداد میں چل رہی ہے کراچی کے علاوہ حیدر آباد سمیت اندرون سندھ کے تمام شہروں سمیت اسلام آباد، لاہور، کوئٹہ، پشاور وغیرہ میں بھی شٹر ڈائون ہڑتال ہے، تاجروں نے مطالبہ تسلیم نہ ہونے پر اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کی دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ ہم اب تک غیر سیاسی ہیں۔ لیکن اگر مطالبات تسلیم نہ کئے گئے تو تمام سیاسی اور اپوزیشن پارٹیوں کو ساتھ لے کر اسلام آباد کا گھیرائو کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی اور لاہور میں پریس کانفرنسز سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سیکریٹری جنرل آل پاکستان انجمن تاجران نعیم میر نے دیگر رہنمائوں کے ہمراہ لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یکم جولائی سے عائد ہونیو الے ٹیکس کے خلاف ملک بھر کے تاجر مسلسل احتجاج کر رہے ہیں، چیئرمین عتیق میر، سندھ تاجر اتحاد کے چیئر مین جمیل پراچہ اور صدر الائنس آف مارکیٹس ایسوسی ایشن کے وائس چیئر مین اشرف موٹلانی اور جنرل سیکریٹری الیاس میمن نے مشترکہ پریس کانفرنس میں اس عزم کا اعادہ کیا کہ ملک بھر کی تاجر برادری اب کسی بھی ناجائز ، غیر قانونی اور غیر آئینی ٹیکس یا تاجروں کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کو برداشت نہیں کرے گی اور حکمرانوں نے اب بھی ہوش کے ناخن نہ لئے تو تاجر برادری تا حکم ثانی اپنا کاروبار بند کرکے سڑکوں پر آجائے گی۔ اس موقع پر اسماعیل لالپوریہ ، عبدالصمد خان، الیاس میمن، زبیر علی خان، سلیم میمن، رضوان عرفان، انصار بیگ قادری و دیگر بھی موجود ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومتی ہٹ دھرمی اور ود ہولڈنگ ٹیکس کے تاحال خاتمہ نہ کئے جانے کے خلاف آج ملک بھر کی تاجر برادری ایک پلیٹ فارم پر متحد ہے اور آج اس پریس کانفرنس میں کراچی اور سندھ کی نمائندگی کرنے والے تاجر رہنمائوں اور تاجروں کی شرکت نے اس بات کو ثابت کر دیا ہے کہ اب تاجروں کو لڑوا کر ٹیکسوں کے نفاذ کی حکومتی سازش کو کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیا جائے گا۔ رہنمائوں نے کہا کہ ہم وفاقی حکومت کو 12 نکاتی چارٹرڈ آف ڈیمانڈ پیش کر کے گیند ان کی کورٹ میں ڈال دی ہے۔ اب حکمرانوں کو اس بات کا فیصلہ کرنا ہے کہ وہ اس ملک کو خوشحال اور معاشی طور پر مضبوط دیکھنا چاہتے ہیں یا وہ اپنی ہٹ دھرمی سے اس ملک میں کوئی بڑا معاشی بحران پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ علاوہ ازیں تحریک انصاف کے چیئر مین عمران خان، پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری، امیر جماعت اسلامی سراج الحق، ایم کیو ایم سمیت دیگر سیاسی جماعتوں نے تاجر برادری کو اپنی بھر پور حمایت کا یقین دلایا ہے۔ دوسری طرف تاجروں نے آج پھر احتجاجی ریلیاں نکالنے اور مظاہرہ کرنے کا اعلان بھی کیا ہے۔

Tags: