تاجروں کا ود ہولڈنگ ٹیکس کیخلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ

September 10, 2015 4:17 pm0 commentsViews: 21

ٹیکس تاجروں کیلئے موت کا پروانہ ہے، کسی صورت قبول نہیں کریں گے
کرپٹ افسران کے باعث تاجر ٹیکس ریٹرن جمع کرانے سے گھبراتے ہیں، جاوید حاجی عبداللہ
کراچی( کامرس رپورٹر) ود ہولڈنگ ٹیکس چھوٹے تاجروں کی معیشت کیلئے موت کا پروانہ ہے۔ دو طرفہ ٹرانزکشن فیس کی کٹوتی بنیادی سرمایہ کاری کو نقصان پہنچا رہی ہے۔ وزیر خزانہ عوام کو ریلیف دینے کی بجائے ود ہولڈنگ اور آئی ایم ایف کی غلامی مسلط کرنا چاہتے ہیں جو کسی طور پر قابل قبول نہیں ہر گزرتے دن کے ساتھ مالیاتی خسارے میں اضافہ حکومت کیلئے لمحہ فکریہ ہے احتجاجی جلسے سے اولڈ سٹی کے تاجر رہنمائوں کا خطاب، تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز بینک ٹرانزکشن کے خلاف ہونے والی ہڑتال کے موقع پر جونا مارکیٹ، لی مارکیٹ، تاجر مارکیٹ، کپڑا مارکیٹ، کھجور بازار اور اطراف کی مارکیٹوں نے کھجور بازار میں ود ہولڈنگ ٹیکس کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا۔ احتجاجی مظاہرے کی قیادت آل پاکستان کنفکشنری ایسوسی ایشن کے چیئر مین جاوید حاجی عبداللہ نے کی اس موقع پر تاجروں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کے نا اہل اور کرپٹ افسران کے رویے کے باعث چھوٹے تاجر ٹیکس ریٹرن جمع کرانے سے گھبراتے ہیں۔ اس موقع پر ایسوسی ایشن کے جنرل سیکریٹری اسحاق منشی نے کہا کہ ہم ٹیکس دینا چاہتے ہیں لیکن اس کیلئے کرپشن سے پاک ایسا سہل نظام متعارف کرایا جائے جو چھوٹے تاجروں کیلئے قابل عمل ہو اس موقع پر دیگر تاجر رہنمائوں نے بھی ٹیکس کی صورت میں بھتہ وصولی کے خلاف احتجاج جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا۔

Tags: