اسلام کے نام پر فساد پھیلانے والوں کو انجام تک پہنچائیں گے‘ چوہدری نثار

September 11, 2015 3:08 pm0 commentsViews: 21

این جی اوز کیلئے نئی پالیسی کا اعلان جلد کیا جائے گا‘ دہشتگردی کے خاتمے میں وقت لگے گا‘ پوائنٹ اسکورنگ نہ کی جائے‘ وزیرداخلہ
دہشتگردی کے بڑے کردار ہتھیار ڈالنے کیلئے تیار ہیں‘ مدارس کی قیادت سے مشاورت کے بعد ان کی رجسٹریشن کی جائے گی‘ پریس کانفرنس
اسلام آباد( نیوز ایجنسیاں) وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ دہشت گردی، عسکریت پسندی، ایک دوسرے کو کافر اور واجب القتل کہنے والوں کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔ دہشتگردوں کے بڑے بڑے کردار ہتھیار ڈالنے پر تیار ہیں۔ مدارس کی رجسٹریشن کا طریقہ کار وضع کرنے کیلئے آئندہ ہفتے علماء کا اعلیٰ سطح کا وفد وفاقی حکومت اور پھر صوبوں کے اعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کرے گا، این جی اوز کیلئے نئی پالیسی کا اعلان جلد کیا جائے گا۔ دہشت گردی کے خاتمے میں وقت لگے گا۔ گزشتہ روز ایپکس کو کمیٹی کے اجلاس کے بعد پنجاب ہائوس اسلام آباد میںپریس کانفرنس کرتے ہوئے چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ وزیر اعظم کی زیر صدارت ہونے والا اجلاس انتہائی اہم تھا جس میں اہم فیصلے کئے گئے، اسلحہ لائسنس کو کمپیوٹرائزڈ کرنے جا رہے ہیں اور نادرا کی مدد سے انٹر نیشنل و قومی این جی اوز کا ڈیٹا بیس بنانا چاہتے ہیں، اسلام کے نام پر فساد پھیلانے والوں کو منطقی انجام تک پہنچا یا جائے گا، وزیر داخلہ نے کہا کہ اسلام کے نام پر فساد پھیلانے والوں، ایک دوسرے کو کافر اور واجب القتل کہنے والوں کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔ دہشت گردوں کے بڑے بڑے لوگ ہتھیار ڈالنے کیلئے تیار ہیں خود کش بمبار اسلام کی علامت نہیں ہیں۔ مدارس کی قیادت سے مشاورت کے بعد ان کی رجسٹریشن کی جائے گی اور رجسٹریشن کا فارم انتہائی آسان بنا یا جائے گا۔ تا کہ کوئی مشکل پیش نہ آئے، انہوں نے خبر دار کیا کہ جب تک میں وزیر داخلہ ہوں مدارس پر چڑھ دوڑنے کی پالیسی نہیں چل سکے گی۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ دہشت گردی کے خاتمے میں وقت لگے گا۔ اس پر پوائنٹ اسکورنگ کی جائے گی۔ ایک دن وہ ضرور آئے گا جب پاکستان سے دہشت گردی ختم ہوجائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سیکورٹی کمپنیاں صرف نام کی کمپنیاں ہیں کیونکہ ان کے پاس جو اسلحہ ہے اس میں سے بیشتر چلتا ہی نہیں جبکہ کچھ سیکورٹی گارڈ اسلحہ چلانا بھی نہیں جانتے۔ اس لئے فیصلہ کیا گیا ہے کہ سیکورٹی ایجنسیوں کو سال میں ایک دفعہ ٹریننگ دی جائے گی۔

Tags: