ہڑتالوں کی سیاست ختم ہونی چاہئے‘ پرویز رشید

September 12, 2015 1:07 pm0 commentsViews: 24

پاکستان اب ہڑتالوں کے ذریعے سیاست کا متحمل نہیں ہوسکتا‘ زبردستی دکانیں بند کرانے والوں سے قانون نافذ کرنے والے ادارے نمٹیں گے
حکومت کوکسی کے خلاف انتقامی کارروائی نہیں کرنی چاہئے‘ کسی کو کراچی آپریشن پر اعتراض ہے تو وہ عدالتوں سے رجوع کرے
کراچی( اسٹا ف رپورٹر) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات سینیٹر پرویز نے کہا ہے کہ دھونس دھمکیوں سے معاملات نہیں چلائے جاسکتے‘ پاکستان ہڑتالوں کے ذریعہ سیاست کا متحمل نہیں ہوسکتا‘ کراچی سمیت ملک بھر میں جاری آپریشن پر کسی کو اعتراض ہے تو وہ عدالتوں سے رجوع کرے‘ زبردستی دکانیں اور بازار بند کرانے والوں سے قانون نافذ کرنے والے ادارے نمٹیں گے‘ حکومت کسی کیخلاف انتقامی کارروائی نہیں کررہی ہے‘ ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کی تقریر پر پابندی لاہور ہائی کورٹ نے لگائی ہے‘ اگر تقریریں قابل اعتراض نہیں تھیں تو معافی کیوں مانگی‘ احتساب کے فیصلوں اور کارروائیوںپر کسی کوئی اعتراض ہے تو وہ اعلیٰ عدلیہ سے رجوع کرسکتا ہے۔ ہڑتالوں کے ذریعے ملکی معیشت کا لات مارنے والے کل عوام سے کس منہ سے ووٹ مانگیں گے۔ ہڑتال کی کال دینے والوں سے گزارش ہے کہ اگر انہیں کسی مسئلے پر تحفظات ہوں تو وہ عدالتوںکا دروازہ کھٹکھٹائیں ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے جمعہ کو نیشنل بک فائونڈیشن کے تحت تین روزہ کتابی میلے کی افتتاحی تقریب سے خطاب اور بعد ازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک سے ہڑتالوں کا خاتمہ حکومت کا عزم ہے۔ ہڑتال کی کال دینے سے مسائل حل نہیں ہوتے‘ اگر کسی کو کوئی مسئلہ یا تحفظات ہیں تو وہ عدالتوں سے رجوع کرے اور پارلیمنٹ میں آواز اٹھائے۔ انہوں نے کہا کہ قومی ایکشن پلان کے فیصلوں کے مطابق یہ طے کیا گیا ہے کہ کسی کو ملک میں عدم استحکام اور ہڑتال کرنے کی اجازت نہیں دی جائیگی۔ ہڑتال کرنے والوں کیخلاف قانون نافذ کرنیو الے ادارے ایکشن لیں گے۔

Tags: