نندی پور پلانٹ سابق وزراء سمیت 5 اہم شخصیات کی گرفتاری کا فیصلہ

September 12, 2015 1:36 pm0 commentsViews: 23

قومی احتساب بیورو نے پلانٹ میں ہونے والی کرپشن سے متعلق تحقیقات مکمل کرلی‘ سینیٹر بابر اعوان سمیت 20 سے زائد افراد سے تفتیش
جوڈیشل کمیشن نے نندی پور منصوبے میں تاخیر اور 113 ارب روپے نقصان کی ذمہ داری وفاقی وزارت قانون پر عائد کردی
لاہور( آئی این پی) قومی احتساب بیورو ( نیب) نے نندی پور پاور پلانٹ میں ہونیوالی کرپشن کی تحقیقات مکمل کرلی۔ کرپشن میں ملوث سابق وزراء سمیت5 اہم شخصیات کو گرفتار کرنے کا فیصلہ جبکہ سینیٹر ڈاکٹر بابر اعوان اور اس وقت کے وزارت پانی و بجلی اور وزارت قانون و انصاف کے سینئر حکام اور بیورو کریٹس سمیت30 سے زائد افراد سے تفتیش کی گئی ہے۔ علاوہ ازیں جوڈیشل کمیشن نے نندی پور پاور منصوبہ میں تاخیر اور113 ارب روپے نقصان پہنچانے کی ذمہ داری وفاقی وزارت قانون و انصاف پر عائد کی ہے جبکہ موجودہ حکومت بھی اس اہم منصوبہ میں تاخیری مجرمانہ غفلت کی مرتکب ہوئی ہے۔ سپریم کورٹ کی ہدایت پر نندی پور پاورمنصوبہ کی تحقیقات جسٹس ریٹائرڈ رحمت حسین جعفری پر مشتمل جوڈیشل کمیشن نے مکمل کی۔ رپورٹ کے مطابق سپریم کورٹ نے تحقیقات خواجہ محمد آصف کی آئینی پٹیشن کی روشنی میں شروع کیں تھیں۔ جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کے مطابق نندی پور قومی نوعیت کا اہم منصوبہ ہے جس کی تکمیل میں وفاقی حکومت نے مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کیا ہے اور وفاقی حکومت کی غفلت کے نتیجے میں نندی پور منصوبہ تاخیر کا شکار ہوا ہے جس سے قومی خزانہ کو شدید نقصان پہنچا ہے۔ جوڈیشل کمیشن نے اپنی رپورٹ میں تاخیر کی ذمہ داری براہ راست وفاقی وزارت قانون و انصاف پر عائد کی ہے وزارت قانون و انصاف کی مجرمانہ غفلت سے قومی خزانہ کو 113 ارب روپے کا نقصان ہوا ہے۔ رپورٹ کے مندرجات کے مطابق نواز شریف حکومت بھی منصوبہ کی تکمیل میں مجرمانہ تاخیر کی ذمہ دار ہے جس سے قومی خزانہ کو84 ارب روپے کا نقصان پہنچا ہے۔

Tags: