مطالبات تسلیم نہ ہوئے تو مزار قائد پر 252 دن کا دھرنا ہوگا، فاروق ستار

September 14, 2015 4:23 pm0 commentsViews: 26

ایم کیو ایم کی سیاسی طاقت کو کمزور کرکے شہر ،طالبان داعش اور کالعدم تنظیموں کے حوالے کرنے کی سازش کی جارہی ہے
کراچی میںسویلین مارشل لاء نافذ کردیا گیا ہے، فاروق ستار، وسیم اختراور دیگر رہنمائوں کا ایم کیو ایم کی ریلی کے شرکاء سے خطاب
کراچی( اسٹاف رپورٹر)ایم کیو ایم کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ وزیراعظم میاں محمد نواز شریف‘ وزیراعلیٰ قائم علی شاہ اور عدلیہ نے ہماری بات نہیں سنی ہے‘ آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے اپیل کی ہے کہ وہ ایک ٹیم بھیجیں جو یہاں تحقیقا ت کرے‘ کراچی میں ایم کیو ایم کی سیاسی طاقت کو کمزور کرکے طالبان‘ داعش اور کالعدم تنظیموں کے حوالے کرنے اور ایم کیو ایم کو بلدیاتی انتخابات سے آئوٹ کرنے کیلئے سازشیں کی جارہی ہیں‘ ریاستی ادارے آزاد ہیں اور کراچی میں سویلین مارشل لاء نافذ کردیا گیا ہے لیکن کراچی کے عوام شہر کو دہشت گردوں کے حوالے کرنے کی سازشیں ناکام بنادیں گے اتوار کو لاکھوں باہمت و نڈر عوام نے تمام تر رکاوٹوں اور دھونس دھمکیوں کے باجود لیاقت آباد سے مزار قائد تک بڑی ریلی نکال کر ظالم قوتوں کو ناکام بنادیا ہے‘ ایم کیو ایم نے اپنے کارکنان کے ماورائے عدالت قتل‘ جبری گمشدگیوں اور ٹارگٹ کلنگ کیخلاف ہر دروازہ کھٹکھٹایا ریاستی ادارے آئین و قانون کیخلاف ورزیاں کررہے ہیں‘ خون رنگ لائے گانئے صوبہ آئیگا اور یہ صوبہ پاکستان کے مظلوم اور متوسط طبقے سے تعلق رکھنے والوں کا ہوگا‘ اگر ہمارے جائز مطالبات حل نہ کئے گئے تو مزارقائد کے سامنے252 دن کا پر امن دھرنا دے سکتی ہے اور لوگ اس دھرنے کو دیکھتے ہوئے126 دن کا دھرنا بھول جائیں گے‘ وہ اتوار کو ایم کیو ایم کے زیر اہتمام شہداء لاپتہ اور اسیر کارکنان کو سلام عقیدت پیش کرنے کیلئے لیاقت آباد دس نمبرسے مزار قائد تک منعقدہ بڑی ریلی کے شرکاء سے خطاب کررہے تھے‘اس موقع پر رابطہ کمیٹی کے ڈپٹی کنوینر سید شاہد پاشا‘ سینیٹر ایگزیکٹو کمیٹی کے وسیم اختر اور زریں مجید نے بھی خطاب کیا۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ ایم کیو ایم کراچی میں جنگل کا قانون یکسر مسترد کرتی ہے اوراب اس جنگل کے قانون کو مزید چلنے نہیں دے گی‘ ایم کیو ایم کی فلاحی اور سیاسی سرگرمیوں کوآئین و قانون کیخلاف ورزی کرتے ہوئے چھینا گیا ہے لیکن کراچی سمیت ملک بھر کے عوام قائد تحریک الطاف حسین سے محبت رکھتے ہیں اور آج ان کے نظریے سے جڑے ہوئے ہیں‘ انہوں نے کہا کراچی میں ہونیوالی نا انصافیوں سے ملک کا استحکام دائو پر لگ رہا ہے لیکن ہمارے حکمران پاک چین کوریڈور کے نشے میں گم ہیں‘ انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کے5 کارکنان کا ماورائے عدالت قتل کیا گیا‘ 150 سے زائد کارکنان کو گرفتاریوں کے بعد لاپتہ کردیا گیا ہے اور کسی عدالت میں انہیں پیش نہیں کیاجارہا‘4000 کارکنان کو بلا جواز گرفتار کیا گیا ہے۔

Tags: