ملتان میں خود کش حملہ،20 افراد جاں بحق،60 زخمی

September 14, 2015 4:42 pm0 commentsViews: 25

خود کش دھماکے سے جاں بحق افراد کی لاشیں جھلس گئیں، شناخت نہ ہو سکی، زخمیوں کے جسموں کے لو تھڑے بکھر گئے
رکشہ اسٹینڈ پر کھڑی گاڑیوں میں آگ لگ گئی،2 دکانیں 5 رکشے، کار اور موٹر سائیکل تباہ ہو گئی
ملتان( مانیٹرنگ ڈیسک) وہاڑی چوک پر لاری اڈہ کے رکشہ اسٹینڈ میں ہونے والے دھماکے میں کم از کم20 افراد جاں بحق اور60 سے زائد زخمی ہوگئے۔ متعدد زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے۔ نجی ٹی وی کے مطابق دھماکہ خود کش کو حملے کا نتیجہ تھا۔ حکام کا کہنا ہے کہ دہشت گرد بارود منتقل کر رہے تھے کہ دھماکہ ہوگیا۔ دھماکہ اتنا شدید تھا کہ آواز میلوں دور تک سنائی دی اور ہر طرف خون و گوشت کے لوتھڑے بکھر گئے۔ جاں بحق ہونے والوں کی لاشیں بری طرح جھلس گئیں اور رات گئے تک ان کی شناخت نہ ہو سکی۔ بیشتر زخمی بھی جھلسے ہوئے تھے۔ کئی افراد کی بازو و ٹانگیں اڑ چکی ہیں۔ بیشتر افراد بال بیرنگ و لوہے کے ٹکڑے لگنے سے زخمی ہوئے۔ دھماکے کے بعد قریب کھڑی متعدد گاڑیوں اور بسوں میں آگ لگ گئی جبکہ 2 دکانیں تباہ ہوگئیں، 5 رکشے ایک کار اور ایک موٹر سائیکل بھی تباہ ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق اتوار کی شام ساڑھے 7 بجے کے قریب ملتان کے علاقے وہاڑی چوک پر لاری اڈہ کے رکشہ اسٹینڈ میں دھماکے میں کم از کم20 افراد شہید اور 60 سے زائد زخمی ہوگئے۔ ڈی سی او ملتان نے خود کش دھماکے کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ جائے وقوعہ سے 2مشکوک لاشیں ملی ہیں۔ جن میں سے ایک بمبار اور دوسری اس کے سہولت کار کی ہو سکتی ہے۔ دھماکہ اتنا شدید تھا کہ اس کی آواز دور دور تک سنائی دی۔ دھماکے کے مقام پر 2 ضرب دو فٹ گہرا گڑھا پڑ گیا۔ قریبی عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔ دھماکے میں درجنوں مسافروں کے بیگ و دیگر سامان بکھر گیا۔ دھماکے کے بعد افرا تفریح پھیل گئی اور ہر طرف چیخ و پکار مچ گئی، دھماکے کی اطلاع ملتے ہی پولیس، بم ڈسپوزل اسکواڈ ، ریسکیو و دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکار فوری جائے وقوعہ پہنچ گئے پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے کر شہادتیں جمع کرنا شروع کر دیں، بی بی سی کے مطابق نشتر اسپتال کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ان کے پاس 7 افراد مردہ حالت میں لائے گئے جبکہ13 اسپتال میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے۔ 60 سے زائد زخمی بھی اسپتال میں لائے گئے ہیں۔ جن میں سے متعدد افراد کی حالت تشویشناک ہے۔

Tags: