سندھ پولیس کے 2 افسران کے تبادلے

September 15, 2015 2:33 pm0 commentsViews: 22

کراچی (اسٹا ف رپورٹر)سندھ پولیس میں دو افسران کے تبادلے اور تقرریاں کردی گئیں ۔ ایس ایس پی تنویر عالم اوڈھو کوکرائم برانچ سے ایس ایس پی کورنگی تعینات کردیا گیا جبکہ ایس ایس پی نعیم شیخ کو سنٹرل پولیس آفس رپورٹ کرنے کا حکم دے دیا گیا۔

سعیدآباد میں پولیس چوکی کوٹارچرسیل بنانے پر 5اہلکار معطل
ٹارچر سیل سے 2محنت کش بازیاب، چوکی سے جعلی پولیس اہلکار بھی ملے
معطل اہلکاروں کے خلاف مزید محکمہ جاتی کارروائی کی جائے گی، ایس ایس پی ویسٹ
کراچی(کرائم رپورٹر)ایس ایس پی ویسٹ نے پولیس چوکی کو ٹارچر سیل بنانے والے پولیس افسر سمیت5اہلکاروں کو معطل کرکے حراست میں لے لیا ،ٹارچر سیل سے دو محنت کش افراد کو بازیاب کروالیا ،پولیس افسر واہلکار شہریوںکو ڈرادھمکاکر رقوم وصول کرتے تھے ۔تفصیلات کے مطابق ایس ایس پی ویسٹ اظفر مہیسر نے سعیدآبادتھانے کی پولیس چوکی گلشن مزدور کے انچارچ ندیم تنولی سمیت عملے کے5پولیس اہلکاروں کو معصوم شہریوں شہزاد اور محمدمعادکوغیر قانونی طورپر حبس بیجا میں رکھنے اوراہلخانہ سے رہائی کیلئے رقوم طلب کرنے پر معطل کرکے حراست میں لے لیا ،پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ ندیم تنولی اس کے کارندے چودھری قمر و دیگر نے چوکی کے نام پرخفیہ ٹارچر سیل بنا رکھا تھاجسکی نشاندھی پر ایس ایس پی ویسٹ اظفر مہیسرنے رنگے ہاتھوں بھاری رشوت لیتے ہوئے اسی تھانے کی پولیس نفری سے گرفتارکروایا اور غیر قانونی طور پرحبس بیجا میں رکھے ہوئے شہزاد معادجوکہ مزدور ہیں کوبازیاب کروایا،پولیس کا کہنا ہے کہ ندیم تنولی اور دیگر نے دونوں نوجوانوں کو جمعہ اورہفتے کی درمیان شب رات گئے لسبیلہ چورنگی کے قریب جہانگیرروڈ سے ان کے گھروں میں نشے کی حالت میں داخل ہوکرحراست میں لیا تھا ،انکی رہائی کیلئے ورثاء سے بھاری رشوت کا مطالبہ کیا گیا اور رقم نہ دینے پر جعلی پولیس میں مارنے کی دھمکی دی،پولیس کے مطابق داؤدگوٹھ پولیس مقابلہ کے اچانک چھاپے کے وقت پولیس وردی میں ملبوس جعلی اہلکار بھی ملے جن کو ندیم تنولی پولیس کی وردیاں پہنا کر شہر بھر میں کاروائیاںکرواتاتھا،ایس ایس پی ویسٹ اظفر مہیسر کا کہنا ہے کہ معطل اہلکاروں کے خلاف مزید تحقیقات کی جا رہی ہے جن کے خلاف مزید محکمہ جاتی کارروائی عمل میں لائی جائیگی۔

Tags: