کالعدم تنظیموں کو کھالیں جمع کرنے کی اجازت نہیں ہوگی سندھ ایپکس کمیٹی

September 16, 2015 3:35 pm0 commentsViews: 29

سندھ میں کام کرنے والی تمام این جی اوز اور سیکورٹی کمپنیوں کی سیکورٹی کلیئرنس ہوگی‘ کراچی میں مزید ڈھائی ہزار کیمرے لگائے جائیں گے
دینی مدارس کے معاملات کیلئے ضابطہ اخلاق بنایا جائے گا‘ بلا امتیاز آپریشن کا مقصد دہشت گردوں کا خاتمہ کرنا ہے‘ نثار کھوڑو کی بریفنگ
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سندھ کی ایپکس کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ صوبے میں کام کرنیوالی تمام این جی اوز اور سیکورٹی کمپنیوں کی سیکورٹی کلیئرنس ہوگی، این جی اوز کی میپنگ اور دینی مدارس کی جیوٹریکنگ ہوگی، دینی مدارس کے لئے حکومت اور مذہبی تنظیموں کی10 رکنی کمیٹی ضابطہ اخلاق تشکیل دے گی۔ کراچی میں5 میگا پکسل کے مزید ڈھائی ہزار سی سی ٹی وی کیمرے نصب کئے جائیں گے۔ کالعدم تنطیموں کو کھالیں جمع کرنے کی اجازت نہیں ہوگی۔ کالعدم تنظیموں سے وابستہ لوگ انتخابات میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔ چینی باشندوں کیلئے خصوصی فورس تشکیل دی جائے گی۔ سندھ میں کام کرنے والی تمام این جی اوز کی رجسٹریشن بھی ہوگی۔ سندھ کی ایپکس کمیٹی کا اجلاس منگل کووزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کی صدارت میں منعقد ہوا۔ جس میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان نے بھی خصوصی طور پر شرکت کی۔ اجلاس میں کور کمانڈر کراچی لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار، ڈی جی رینجرز میجر جنرل بال اکبر، چیف سیکریٹری سندھ محمد صدیق میمن، آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی اور قانون نافذکرنے والے اداروں، انٹیلی جنس ایجنسیز کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس کے بعد سندھ کے سینئر وزیر برائے اطلاعات اور تعلیم نثار کھوڑو نے ایپکس کمیٹی کے فیصلوں کے بارے میں صحافیوں کو بریفنگ دی۔ انہوں نے کہا کہ یہ اجلاس وفاقی ایپکس کمیٹی کے فیصلوں پر عملدر آمد کا جائزہ لینے کے لئے منعقد ہوا تھا۔ اجلاس میں سندھ کے حوالے سے متعدد اہم فیصلے کئے گئے انہوں نے بتایا کہ ایپکس کمیٹی نے یہ فیصلہ کیا کہ سندھ میں کام کرنے والی انٹر نیشنل این جی اوز کو وفاقی حکومت میں رجسٹرڈ کرایا جائے گا۔ جبکہ مقامی این جی اوز کو سندھ حکومت میں رجسٹرڈ کرایا جائے گا۔ تمام این جی اوز کی سیکورٹی کلیئرنس ان کی سرگرمیوں پر نظر رکھی جائے گی۔ ایپکس کمیٹی نے یہ بھی فیصلہ کیا کہ جن اسلحہ لائسنسز کی مقررہ مدت میں تجدید یا کمپیوٹرائزیشن نہیں ہوئی، وہ اسلحہ منسوخ ہوں گے۔ محکمہ داخلہ سندھ اسلحہ لائسنسز کی منسوخی کی کارروائی کو مکمل کرے گا۔ ایپکس کمیٹی نے یہ فیصلہ بھی کیا کہ صرف مجاز کمپنیاں بلٹ پروف اور بم پروف گاڑیاں بنا سکیں گی۔ ایپکس کمیٹی نے یہ بھی فیصلہ کیا کہ سندھ میں کام کرنیوالی 257 سیکورٹی کمپنیوں کو اپنی سیکورٹی کلیئرنس کرانا ہوگی۔ سیکورٹی کمپنیاں اس بات کی بھی پابند ہوں گی کہ اگر ان کا کوئی ملازم ڈیوٹی کے دوران جاں بحق یا زخمی ہوتا ہے تو اس کامعاوضہ ادا کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ سینئر صحافی آفتاب عالم کے قاتل پکڑے گئے ہیں۔ ہم وزیر اعلیٰ سندھ سے یہ درخواست کریں گے کہ ان کے ورثاء کو معاوضہ دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما سید علی نواز شاہ کو نیب کی طرف سے سزا پر دکھ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں کراچی آپریشن پر اطمینان کا اظہار کیاگیا اور سندھ حکومت کی کوششوںں کو سراہا گیا۔ کراچی میں حالات قابو میں آچکے ہیں۔ لوگوں میں تحفظ کا احساس اور اعتماد بڑھ رہا ہے۔ بلا امتیاز آپریشن کا مقصد دہشت گردوں، اغواء کاروں، بھتہ خوروں اور ٹارگٹ کلرز کا خاتمہ ہے۔

Tags: