ڈی آئی جی ایسٹ اور ایس ایس پی میں اختلافات، جرائم بڑھنے لگے

September 16, 2015 4:08 pm0 commentsViews: 30

دونوں افسران میں بات چیت منقطع، ڈی آئی جی نے من پسند ایس ایچ اوز کی تعینات شروع کردی
کراچی( کرائم رپورٹر) ڈسٹرکٹ ایسٹ میں جرائم کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کی وجہ کھل کر سامنے آگئی ہے۔ ڈی آئی جی ایسٹ منیر شیخ اور ایس ایس پی ایسٹ جاوید جسکانی میں اختلافات شدت اختیار کرگئے ہیں‘ تفصیلات کے مطابق لینڈ گریبرز کی گرفتاری اور زمینوں پر قبضے روکنے والے ایس ایس پی ایسٹ اور ڈی آئی جی منیر شیخ کے منفی رویے اور لینڈ گریبرز کی مدد کرنے والے عمل سے مایوسی کا سامنا ہے‘ ڈی آئی جی نے ایسٹ میں ایس ایس پی کی رائے لئے بغیر اپنے من پسند ایس ایچ اوز کی تعیناتی شروع کردی ہے‘ ایس ایس پی جاوید جسکانی کی ایسٹ میں بطور ایس ایس پی تعیناتی کے ایک ہفتے بعد ہی ڈی آئی جی منیر شیخ نے ایس ایس پی سے یہ بات پر اختلافات شروع کردیئے‘ ذرائع کے مطابق رشید گوڈیل حملے سے لے کر دیگر سنگین وارداتوں میں اضافہ دونوں اعلیٰ افسران میں جاری سرد جنگ کا نتیجہ بتایا جاتا ہے‘ آج تک رشید گوڈیل ‘وکلاء رہنما امیر حیدر شاہ اور جیو نیوز کی سیٹلائٹ وین پر حملے والے اہم کیسز کی جیو فینسنگ کیلئے ڈی آئی جی تحریری طور پر لکھتا ہے جبکہ متعلقہ ایس پی تفتیش فالو اپ رکھتا ہے لیکن ایسٹ زون میں پولیس افسران میں اختیارات پر جاری جنگ میں سب التواء کا شکار ہیں۔ موجودہ ڈی آئی جی اور ایس ایس پی ایسٹ کی گزشتہ ایک ماہ سے بات چیت نہیں ہے ان کے درمیان سرکاری طور پر بھی تحریری رابطہ منقطع ہے۔واضح رہے کہ دونوں افسران میں اس سے قبل بھی ورکنگ ریلیشن شپ اچھی نہیں رہی ہے۔

Tags: