آج صبح پشاور میں ایئرفورس بیس پر حملہ ناکام،10دہشت گرد ہلاک

September 18, 2015 4:17 pm0 commentsViews: 19

صبح فجر کے وقت مسلح دہشت گردوں نے بڈھ بیر کے علاقے میں واقع پی اے ایف بیس پر حملہ کردیا، فائرنگ کی کی،راکٹ بھی داغے گئے، سیکورٹی فورسز نے بروقت کارروائی کرکے حملہ ناکام بنادیا
دہشت گردوں نے پاک فضائیہ کے کیمپ میں گارڈ روم کو پہلے نشانہ بنایا،حملے میں پاک فوج کے 2افسران سمیت 10جوان اور دیگر20افراد زخمی ہوگئے، واقعہ کے بعد سیکورٹی فورسز نے علاقے کو گھیر لیا، سرچ آپریشن میں متعددمشتبہ افراد گرفتار
پاکستان سے دہشت گردی کا مکمل خاتمے کرکے دم لیں گے، وزیراعظم، دہشت گرد اپنے عزائم میں کامیاب نہیں ہوں گے، صدر مملکت ممنون حسین، شہبازشریف، عمران خان، سراج الحق و دیگر کی جانب سے واقعہ کی شدید مذمت،آرمی چیف سی ایم ایچ میں زخمیوں کی عیادت کیلئے پہنچ گئے
پشاور( مانیٹرنگ ڈیسک)پشاور کے علاقے بڈھ بیر کے قریب پاکستان ائیرفورس کے بیس کیمپ پر دہشت گردوں نے حملہ کردیا ہے۔ جس کو ناکام بنادیا گیا 10دہشت گرد مارے گئے۔ جس کے نتیجے میں سیکورٹی فورسز کی بھاری نفری موقع پر پہنچ گئی ۔ پولیس ذرائع کے مطابق دہشت گردوں نے کیمپ کے پچھلے حصے پر حملہ کیا ہے، حملے کے دوران دہشت گردوں کی جانب سے کیمپ پر فائرنگ اور راکٹ بھی داغے گئے۔ سیکیورٹی فورسز نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کردیا ہے۔ اس دوران حملہ آور دہشت گردوں اور فورسز کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ بھی جاری ہے۔ ذرائع کے مطابق 10سے 20دہشت گردوں کی کیمپ کے اندر داخل ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔آئی ایس پی آر ترجمان میجر جنرل عاصم سلیم باجوہ کی جانب سے پاکستان ایئرفورس کا بڈھ بیر کیمپ پرحملہ کی تصدیق کی گئی ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ دہشتگردوں نے ایئرفورس کیمپ کے گارڈ روم کو نشانہ بنایا ہے اور کوئیک رسپانس فورس کی بھاری نفری نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا ہے۔مقابلے میں 10دہشت گرد مارے گئے‘ پاک فضائیہ کا اسٹرٹیجک اثاثہ محفوظ ہے‘ ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق تمام دہشت گرد مارے گئے‘ کارروائی میں میجر اور 10فوجی جوان زخمی ہوئے جبکہ دیگر20 افراد بھی زکمی ہوئے‘ نجی ٹی وی کے مطابق 4 افراد شدید زخمی ہوچکے ہیں جن کو مختلف اسپتالوں میں داخل کرایا گیا ہے‘ سیکورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن کرکے متعدد مشتبہ افراد کو گرفتار کرلیا‘ دہشت گردوں نے پی اے ایف کیمپ کے گارڈ روم کو نشانہ پہلے بنایا اس دوران فائرنگ اور بم دھماکوںکی آوازیں سنی گئی سیکورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان راکٹ لانچروں اور بھاری اسلحہ کا تبادلہ ہوا‘ حملے میں کوئیک رسپانس فورس کے سربراہ میجر حسیب زخمی ہوئے‘ ان کی ٹانگ میں گولی لگی‘ ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق حالات کنٹرول میں ہیں‘ انہوں نے کہا کہ تازہ دم دستے پی اے ایف کیمپ پہنچ گئے‘ پی اے ایف کیمپ ایسے علاقے میں واقع ہے جس کے آس پاس کے گائوں اور علاقے دہشت گردوں کے گڑھ تصور کئے جاتے ہیں‘ نجی ٹی وی کے مطابق سیکورٹی فورسز کی جانب سے کچھ دنوں پہلے دہشت گردی کی ممکنہ واردات کی نشاندہی کیلئے ہائی الرٹ جاری ہوا تھا‘ جس کے بعد پشاور ایئر پورٹ اور دیگر سرکاری عمارتوں کو حساس قرار دیا تھا‘ پی اے ایف کیمپ کے قریب ایف سی کیمپ بھی واقع ہے‘ نجی ٹی وی کے مطابق پی اے ایف کے راستے پر پولیس اہلکار تعینات تھے یہ علاقہ بڈھ بیر پولیس اسٹیشن میں واقع ہے آپریشن میں ہیلی کاپٹرز نے بھی حصہ لیا اور 2ہیلی کاپٹر فوری طور پر پی اے ایف کیمپ کے قریب اتارے گئے جس میں کمانڈوز سوار تھے جنہوں نے دہشت گردوں کو گھیرے میں لیا اور جوابی کارروائی کی‘ آئی ایس پی آر کے ڈی جی آصف باجوہ کے مطابق دہشت گردوں کیخلاف آپریشن ایک گھنٹے سے زائد دیر تک جاری رہا حملے مین کوئیک رسپانس فورس کے میجر حسیب سمیت 2 افسران اور 10جوان زخمی ہوئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق پی اے ایف کیمپ میں پاک فضائیہ کے دفتر ‘رہائشی عمارتیں اور اہم تنصیبات واقع ہیں‘ جبکہ پی اے ایف کیمپ انقلاب روڈ اور کوہاٹ روڈ کے سنگم پر اسکیم چوک پر واقع ہے‘ ادھر وزیراعظم نواز شریف نے واقعے کی شدید مذمت کی اور کہا کہ پاکستان کو دہشت گردی سے مکمل طور پر پاک کرکے دم لیں گے۔

Tags: