موسمیاتی تبدیلیاں ٹھٹھہ اور بدین ڈوب جائینگے‘ ڈیلٹا ختم ہونے لگا

September 22, 2015 2:26 pm0 commentsViews: 20

کوسٹل ایریا کے ہزاروں افرادبے گھر ہوگئے‘ فیکٹریوں کا زہریلا فضلے اور کوڑا کرکٹ کے باعث سمندری حیات کا خطرات
5 سے 6 فٹ پانی سطح زمین کے قریب ہونے سے زرعی زمینیں سیم و تھور کی نذر ہوگئی‘ حکومتوں نے کوسٹل ایریا کو نظر انداز کررکھا’ محمد علی شاہ
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) موسمیاتی تبدیلیوں سے کوسٹل ایریا کے ہزاروں افراد بے گھر ہوگئے۔ ڈیلٹا کا 35 لاکھ ایکڑ سمندر برد ہوگیا۔ فیکٹریوں کا زہریلا فضلہ اور کوڑا کرکٹ سمندر میں گرنے سے سمندری حیات کو شدید خطرات لاحق ہوگئے ہیں۔ عالمی اسٹڈی کے مطابق2040 تک ٹھٹھہ اور بدین ڈوب جائیں گے، 73 فیصد آبادی کم خوراکی کا شکار ہے۔ سمندر بدین شہر سے40 کلو میٹر دور رہ گیا ہے۔ جس سے ڈیلٹا ختم ہو رہا ہے۔ اب صورتحال یہ ہے کہ سمندر دریا کے اندر داخل ہوگیا ہے۔ غیر سرکاری تنظیم آکسفین کی طرف سے میڈیا کو کراچی کے علاقے ابراہیم حیدری، ٹھٹھہ، بدین اورکیٹی بندر کا دورہ کرایا گیا۔ اس موقع پر پاکستان فشریز فورم کے چیئر مین محمد علی شاہ نے بتایا کہ ہم موسمیاتی تبدیلیوں کی سزا زیادہ بھگت رہے ہیں۔ حکومتوں نے کوسٹل ایریا کو نظر انداز کیا ہوا ہے۔ زندگی کی بنیادی سہولتیں، اسکولز، صحت اور انفراسٹرکچر نام کی کوئی چیز نہیں ہے۔ 1050 کلو میٹر کوسٹل ایریا ہے جس میں700 کلو میٹر کوسٹل ایریا بلوچستان میں ہے۔ سر کریک میں دونوں ملک ایک دوسرے کے مچھیرے پکڑ لیتے ہیں اس کا مستقل حل نکالا جائے۔ ٹھٹھہ کے رہائشی گلاب شاہ کا کہنا تھا کہ ڈیلٹا کی35 لاکھ ایکڑ زمین سمندر نگل گیا ہے۔ ان کی375 ایکڑ زمین تھی جو ساری سمندر میں چلی گئی ہے اب گھر تک نہیں موسمیاتی تبدیلیوں سے 5 سے6 فٹ پانی سطح زمین کے قریب ہوگیا ہے جس سے زرعی زمین کلر اور سیم تھور کی وجہ سے تباہ ہوگئی ہے۔

Tags: