تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر بلدیہ ملازمین کی عیدپر کام نہ کرنے کی دھمکی

September 23, 2015 2:41 pm0 commentsViews: 35

وزیر بلدیات ناصر حسین شاہ سے مسائل حل کرنے کیلئے آج تک کی ڈیڈ لائن دیدی ہے‘ ذوالفقار شاہ
بلدیہ عظمیٰ کی 4 ڈی ایم سیز میں ساڑھے 4 سو گاڑیوں کے ناکارہ ہونے پر عید آپریشن متاثرہونے کا خدشہ پیدا ہوگیا
کراچی( نیوز ڈیسک) بلدیہ عظمیٰ کے ملازمین نے تنخواہوں اور دیگر الائونسز کی عدم ادائیگی پر عید الاضحیٰ پر کام نہ کرنے کا اعلان کر دیا تو دوسری جانب بلدیہ عظمیٰ کی 4 ڈی ایم سیز مین کچرہ اٹھانے والی ساڑھے 4 سو سے زائد گاڑیوں کے ناکارہ ہونے پر عید آپریشن کو شدید خدشات لاحق ہو سکتے ہیں۔ سجن یونین ( سی بی اے) کے ایم سی کے مرکزی صدر سید ذوالفقار شاہ نے کہا کہ کے ایم سی انتظامیہ اور صوبائی وزیر بلدیات ناصر حسین شاہ سے ملازمین کے تنخواہوں ، پنشن کی عدم ادائیگی اور دیگر مسائل حل کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے جس کیلئے بدھ (آج ) تک کی ڈیڈ لائن دی ہے انہوں نے کہا کہ مطالبات منظور نہ ہونے کی صورت میں عید الاضحیٰ کے موقع پر5 روزہ آپریشن میں حصہ نہیں لیا جائے گا۔ دوسری جانب بلدیہ عظمیٰ کراچی اور شہر کی6 ڈی ایم سیز ساڑھے 4 سو سے زائد کچرا اٹھانے والی گاڑیاں اور دیگر مشینری خراب حالت میں شہر کے مختلف ورکشاپوں میں کھڑی ہیں۔ جس کی وجہ سے کے ایم سی اور ڈی ایم سیز نے رواں عید سیزن کے5 روزہ آپریشن کیلئے پرائیوٹ پارٹیوں سے گاڑیاں کرایہ پر حاصل کر لی ہیں۔ جس پر لاکھوں روپے خرچ کئے جائینگے۔ جبکہ گاڑیوں کو آلائشیں لینڈ فل سائیڈ پر منتقل کرنے کیلئے فیول اور ملازمین کے کھانے اور دیگر الائونس پر 20 کروڑ روپے سے زائد رقم خرچ کی جائے گی۔ عید کے5 روزہ آپریشن کے دوران شہر سے آلائشیں اٹھانے کیلئے کے ایم سی اور 6 ڈی ایم سیز کا 15 ہزار سے زائد عملہ مامور کیا گیا ہے جبکہ5 سو سے لگ بھگ پرائیوٹ لیبر کی خدمات حاصل کی جائے گی۔

Tags: