سعودی عرب کے مفتی اعظم آج مسلسل35 ویں مرتبہ خطبہ حج دینگے

September 23, 2015 3:16 pm0 commentsViews: 36

مفتی اعظم الشیخ عبدالعزیز بن عبداللہ آل شیخ نے1981 میں پہلی مرتبہ خطبہ حج دیا تھا
پیدائشی طور پر کم نظری کا شکار تھے،1960 میں بینائی سے محروم ہو گئے،1999 میں مفتی اعظم مقرر ہو گئے
مکہ مکرمہ(ایجنسیاں)سعودی عرب کے 74 سالہ مفتی اعظم الشیخ عبدالعزیز بن عبداللہ آل الشیخ آج مسلسل 35 ویں مرتبہ حج کا خطبہ دیں گے۔ انہوں نے پہلی مرتبہ 1981ء میں حج کا خطبہ دیا اور یہ سلسلہ آج بھی 35 سال سے جاری ہے۔ وہ 1941ء میں ریاض میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے 12 سال کی عمر میں قرآن پاک حفظ کیا اور 22 سال کی عمر میں امام الدعوۃ انسٹی ٹیوٹ سے شرعیہ میں گریجویشن کی۔ انہیں 1995ء میں سعودی عرب کا نائب مفتی اعظم، جبکہ 1999ء میں مفتی اعظم مقرر کیا گیا۔ وہ پیدائشی طور پر ہی کم نظری کا شکار تھے اور 1960 میں بینائی سے مکمل طور پر محروم ہوگئے۔ مفتی اعظم کی دلچسپی اور ترجیحات میں اسلامی دنیا کے بحران، مسائل کی آگاہی اور زندگی کے تمام شعبوں سے متعلقہ ایسے امور کی نشاندہی کرنا ہے جن کی اصلاح کی ضرورت ہے۔ مفتی اعظم اپنے خطبے میں مسئلہ فلسطین پر خصوصی توجہ دیتے ہیں۔ اس کے علاوہ شیخ اپنے خطبے میں مسلمانوں کی یکجہتی، باہمی اختلافات کے خاتمے کے حوالے سے بھی بیان دیتے ہیں۔

Tags: