150 ارب روپے کے ترقیاتی پیکیج سے کراچی کو جدید سہولتیں ملیں گی‘ گورنر سندھ

September 23, 2015 3:17 pm0 commentsViews: 23

لیاری ایکسپریس وے متاثرین کی آباد کاری میں شکایات کی تحقیقات کیلئے اعلیٰ اختیاراتی کمیٹی قائم کرنیکی ہدایت
کراچی سرکلر ریلوے منصوبے پر سرمایہ کاری کا آغاز کیا جائے‘ جرائم کی روک تھام کیلئے کیمروں کا جال بچھانا ناگزیر ہے اجلاس میں بریفنگ
کراچی( اسٹاف رپورٹر) گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان کی زیر صدارت گورنر ہائوس میں کراچی میں میگا پروجیکٹس کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہوا جس میں اعلیٰ حکام نے گورنر سندھ کو کراچی ترقیاتی پیکیج‘لیاری ایکسپریس وے منصوبہ‘ ماس ٹرانزٹ ‘سرکلر ریلوے‘ گجر نالہ منصوبہ‘ ایمپریس مارکیٹ‘ شہاب الدین مارکیٹ‘ اہم شاہراہوں اور مارکیٹس میں نگراں کیمروں کی تنصیب کے حوالے سے کئے گئے ا قدامات پر تفصیلی بریفنگ دی گئی‘ اس موقع پر صوبائی وزیر بلدیات سندھ ناصر حسین شاہ‘ چیف سیکریٹری صدیق میمن‘ کمشنر کراچی شعیب احمد صدیقی‘ ایڈیشنل چیف سیکریٹری پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ اعجاز شاہ‘ پرنسپل سیکریٹری محمد حسین سید ‘سیکریٹری خزانہ سہیل راجپوت‘سیکریٹری اختر غوری‘ ایڈمنسٹریٹر کراچی سجاد عباسی سمیت دیگر اعلیٰ حکام بھی شریک تھے‘ اجلاس میں گورنر سندھ نے کہا کہ150 ارب روپے کے ترقیاتی پیکیج سے شہر کو جدید ترین سہولیات میسر آئیں گی اور اس سے کراچی کا جدید تشخیص ابھر کر سامنے آئیگا۔ اور ان منصوبوں کے بارے میں عوام کو آگہی دی جائے ‘اجلاس میں لیاری ایکسپریس کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے گورنر سندھ نے بتایا کہ 700 میٹر کا علاقہ ضلع وسطی میں واگزار کرنا باقی رہ گیا ہے جبکہ ضلع غربی میں کل1500 میٹر میں سے800 میٹر علاقہ واگزار کرلیا گیا ہے اور 700 میٹر علاقے کیلئے ڈپٹی کمشنر غربی اپنی کوششیں کررہے ہیں ان علاقوں کو این ایچ اے کے حوالے کیا جارہا ہے تاکہ وہ اپنا کام جاری رکھ سکیں۔ اس موقع پر گورنر سندھ نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ لیاری ایکسپریس وے متاثرین کی آبادی کے حوالے سے متعلق بڑی شکایات موصول ہوئی ہیں جس کے ازالے کیلئے ضروری ہے کہ چیف سیکریٹری کی سربراہی میں ایک اعلیٰ اختیاراتی کمیٹی قائم کی جائے جو تمام معاملے کی شفافیت سے تحقیقات کرکے ملوث عناصر کے خلاف سخت ترین اقدمات کئے جائیں‘ انہوں نے کہا کہ متاثرین کی آباد کاری کے حوالے سے ایک حتمی فہرست تیار کرلی جائے جس کے بعد اس ضمن میں کوئی بھی دعویٰ قبول نہ کیا جائے‘ گورنر سندھ نے کہا کہ آباد کئے جانیوالے علاقہ کو متعلقہ میونسپل ایجنسی کے حوالے سے اسکیموں پر فوری عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے۔ اس سلسلے میں کراچی سرکلر ریلوے پر کام کے حوالے سے گورنر سندھ نے کہا کہ جاپان کی کمپنی جائیکا ایک عرصے سے اس پر کام کررہی ہے‘ منصوبے کو شروع کرنے کیلئے سرمایہ کاری کا آغاز کرے بصورت دیگر کراچی ڈیولپمنٹ پیکیج کے ذریعے اس پر عمل کیا جائے‘ گجر نالہ منصوبے پر دی جانے والی بریفنگ کے دوران گورنر سندھ نے ایڈمنسٹریٹر کو ہدایت کی کہ منصوبے کے تحت نالے کے اطراف سے تجاوزات کا خاتمہ کرکے سڑکوں کی تعمیر کی جائے‘ نگراں کیمروں پر بریفنگ پر گورنر سندھ نے کہا کہ نیشنل ایکشن پلان کے تحت جاری ضرب عضب آپریشن سے پورے ملک میں امن و امان کی صورتحال میں نمایاں بہتری آرہی ہے‘ کراچی میونسپل کارپوریشن کی جانب سے نصب کیمروں سے جرائم کی روک تھام میں موثر مدد مل رہی ہے‘ کیمروں کا جال بچھانا ناگزیر ہے‘ ایمپریس مارکیٹ اور شہاب الدین مارکیٹ کی تزئین و آرائش کے حوالے سے دی جانیوالی بریفنگ میں گورنر سندھ کو بتایا گیا کہ دونوں مارکیٹوں کی تزئین و آرائش کے پہلے فیز پر کام کرلیا گیا ہے۔

Tags: