ڈاکٹر عاصم حسین کو اربوں روپے کے کک بیکس ملنے کا انکشاف غبن کی رقم میں سیاسی آقا بھی حصہ دار

September 24, 2015 1:32 pm0 commentsViews: 29

رقم دہشت گردی اور ٹارگٹ کلرز کی مالی معاونت میں بھی استعمال ہوئی‘ ڈاکٹر عاصم نے رشوت کے عوض کے ای ایس سی کو 100 ارب روپے کی مراعات دیں
ملک کے تمام بینکوں کو ڈاکٹر عاصم حسین سمیت دیگر گرفتار افراد کے مالیاتی اعداد و شمار جمع کرنے کا حکم‘ نام بھی ای سی ایل میں درج
دبئی( نیوز ڈیسک) رینجرز کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ڈاکٹر عاصم حسین نے اربوں روپے کے کک بیکس وصول کئے‘ رپورٹ کے مطابق تمام بینکوں کو سابق وزیر ڈاکٹر عاصم کے مالیاتی اعداد و شمار فراہم کرنے کا حکم دیدیا گیا ہے‘ آصف علی زرداری کے دست راست ڈاکٹر عاصم حسین کو26 اگست کو گرفتار کیاگیا تھا‘ ان سے کی جانیوالی تفتیش کی تفصیلی اور باضابطہ رپورٹ میں کراچی رینجرز نے انکشاف کیا ہے کہ ڈاکٹر عاصم اور ان کے آقائوں نے اربوں روپے کی رشوت وصول کی ۔ اس رپورٹ کو مزید تحقیقات و کارروائی کیلئے نیب کو ارسال کردیا گیا ہے‘ اس رپورٹ میں تفصیلات موجود ہیں کہ پیپلز پارٹی کے رہنمائوں نے کس طرح کس سے اور کتنی رقم بطور رشوت وصول کی‘ سرکاری عہدیداروں کا کہنا تھا کہ نیب نے پہلے ہی ان مخصوص الزامات کی مزید تحقیقات کیلئے رینجرز کے ساتھ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم( جے آئی ٹی) تشکیل دیدی ہے‘ اور کیس کو آگے بڑھانے کیلئے چیئرمین نیب چوہدری قمر الزمان کو رینجر ز کے سربراہ اور کور کمانڈر کی جانب سے پہلے ہی بریفنگ دی جاچکی ہے۔ رینجرز کی یہ رپورٹ رونگٹے کھڑے کردینے والی ہے جس میں بے تحاشہ بد عنوانی و لوٹ مار کی تقریباً ان تمام الزامات کی تصدیق کردی گئی ہے‘ جو کہ اب تک محض میڈیا پر ہی سنے جاتے تھے لیکن کسی سرکاری تحقیقاتی ایجنسی نے اب تک ان کی تصدیق نہیں کی تھی‘ رینجرز رپورٹ کا کورنگ لیٹر 9ستمبر کو نیب کو ارسال کیا گیا‘ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ڈاکٹر عاصم حسین بطور سرکاری عہدیدار بدعنوان سرگرمیوں اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے مرتکب پائے گئے‘ وہ قومی خزانے کو اربوں روپے نقصان پہنچانے کے ذمہ دار ہیں‘ غبن کی جانیوالی رقوم ان کے سیاسی آقائوں کو فراہم کی گئی ‘ جو کہ بعد میں دہشت گردی اور ٹارگٹ کلرز کی معاونت میں استعمال ہوئی‘ رینجرز کی رپورٹ میں درج ذیل مخصوص مقدمات کا تذکرہ کیا گیا ہے‘ ڈاکٹر عاصم نے100 ارب روپے مالیت تک کی غیر قانونی مراعات اور گیس کنکشنز کے ای ایس سی کو دیئے جس کی ملکیت ابراج گروپ کے پاس ہے اور اس کے آصف زرداری اور فریال تالپور سے قریبی تعلقات ہیں۔ زہیر صدیقی نے کے ای ایس سی سمیت دیگر کمپنیوں کو دیئے جانیوالے غیر قانونی کنکشنز کے ذریعے وصول ہونیوالی6سے7 ارب روپے کی رقم ڈاکٹر عاصم کو ادا کرنے کا اعتراف کرلیا‘ ان کنکشنز کے تحت ان کمپنیوں کو گیس واجبات62ارب روپے تک لے جانے کی اجازت دی گئی۔ رپورٹ کے مطابق ملک کے تمام بینکوں کو ڈاکٹر عاصم حسین سمیت دیگر گرفتار افراد کے مالیاتی اعداد و شمار جمع کرانے کا حکم دیا گیا ہے جبکہ ان کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ( ای سی ایل) میں ڈالے گئے ہیں تاکہ وہ وطن چھوڑ کر نہ جاسکیں۔

Tags: