اسلام آباد رشید غازی کے 2 بیٹوں سمیت 3 افراد گرفتار‘ فوجی وردیاں برآمد

September 24, 2015 2:11 pm0 commentsViews: 23

فوجی وردیاں جانوروں کے شکار کیلئے استعمال کرتے ہیں اور ان میں تصاویر بنواتے ہیں‘ ملزمان کا تھانے میں بیان
عبدالرشید غازی کے بیٹے لال مسجد آپریشن کیس میں پرویز مشرف کے خلاف مدعی ہیں اور دستبردار ہونے کیلئے دبائو ڈالا جارہا ہے‘ ترجمان
اسلام آباد( آن لائن، اے این این ) اسلام آباد پولیس اور رینجرز کی مشترکہ کارروائی، لال مسجد کے سابق خطیب عبدالرشید غازی کے2 بیٹوں سمیت3 گرفتار، گاڑی اسلحہ اور فوجی وردیاں بر آمد، پولیس کے مطابق 2007ء میں فوجی آپریشن میں مارے جانے والے لال مسجد کے سابق خطیب عبدالرشید غازی کے دو بیٹے ہارون رشید اور حارث رشید اور دوست آصف وفاقی دار الحکومت کے تھانہ کوہسار کے علاقے میں سپر مارکیٹ کے قریب ناکے پر پولیس اور رینجرز نے روکا، پولیس نے ان کی تلاشی لی تو ان کی گاڑی سے فوجی کمانڈوز کی وردیاں اور ایک پسٹل، 22 بور گن بر آمد ہوئی۔ پولیس نے ملزمان کو تھانہ کوہسار منتقل کر دیا جہاں حساس ادارے اور پولیس کے اعلیٰ حکام بھی پہنچ گئے۔ ذرائع کے مطابق ملزمان نے ابتدائی بیان میں پولیس کو بتایا کہ وردیاں تصاویر بناتے وقت استعمال کیا کرتے تھے راجن پور جا رہے تھے۔ جہاں مختلف جانوروں کا شکار کرتے ہیں تو اس دوران وردیاں استعمال کرتے ہیں اور اپنی تصاویر بھی لیتے ہیں۔ دریں اثناء ترجمان لال مسجد حافظ احتشام نے کہا کہ عبدالرشید غازی کے بیٹے لال مسجد آپریشن کیس میں پرویز مشرف کے خلاف مدعی تھے دونوں پر عرصہ دراز سے مقدمے سے دستبردار ہونے کیلئے دبائو ڈالا جا تا رہا۔ گاڑی سے ایک لباس بر آمد ہوا جو فوجی نہیں ، بر آمد ہونے والے پستول کا لائسنس موجود ہے۔

Tags: