1800 ارب روپے کی بدعنوانی کرپٹ بڑے مگرمچھوں کے گرد شکنجہ کسنے کی تیاریاں مکمل

September 29, 2015 3:02 pm0 commentsViews: 23

وفاقی تحقیقاتی اداروں نے پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے کرپٹ افراد سمیت دیگر بدعنوانوں کو مزید رعایت نہ دینے کا فیصلہ کرلیا
ملک بھر میں 15 اکتوبر کے بعد مطلوبہ افراد کے خلاف کریک ڈائون ہوگا‘ کئی نامور سیاستدان سلاخوں کے پیچھے جائیں گے‘ذرائع
کراچی( نیوز ڈیسک) وفاقی تحقیقاتی اداروں نے1800 ارب روپے کی کرپشن میں ملوث بڑے مگر مچھوں کے گرد شکنجہ کسنے کی تیاریاں کر لیں۔ حساس اداروں کے تعاون سے طے کی جانے والی منصوبہ بندی کے تحت ملک بھر میں15 اکتوبر کے بعد مطلوبہ افراد کے خلاف بڑا کریک ڈائون کیا جائے گا۔ ممکنہ طور پر گرفتار کئے جانے والے افراد میں سیاسی قائدین اور اہم مرکزی رہنمائوں کے نام شامل ہیں مقتدر ادارے بھی سندھ اور پنجاب میں ہونے والی بلدیاتی انتخابات سے قبل میگا کرپشن اسکینڈلز کے مرکزی کرداروں کے خلاف فیصلہ کن کارروائی کے خواہش مند ہیں۔ اہم وفاقی اداروں کی جانب سے کرپشن میں ملوث افراد کے خلاف آئندہ ماہ بڑے کریک ڈائون کی تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں، مذکورہ اہم اداروں کے ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی اداروں کا مرکزی ہدف پیپلز پارٹی کے سابق ادوار حکومت اور مسلم لیگ ن کے سابق و حالیہ ادوار حکومت میں کی جانے والی1800 ارب روپے کی کرپشن کے مرکزی کرداروں کو آہنی سلاختوں کے پیچھے دھکیلنا ہے۔ دیگر صوبائی حکومتوں اور سیاسی جماعتوں کی جانب سے کی جانے والی کرپشن میں ملوث افراد سمیت پیپلزپارٹی اور نواز لیگ کپے اہم افاد کو بھی مزید کوئی رعایت دیئے بغیر قانون کے کٹہرے میں لانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ جن مقدمات کے تحت بڑے اور نامی گرامی افراد پر ہاتھ ڈالے جانے کی تیاری کی جا رہی ہے۔

Tags: