افغان طالبان کا قندوز پر قبضہ جھڑپ میں 46 افراد ہلاک

September 29, 2015 3:12 pm0 commentsViews: 35

طالبان نے شہر کے مرکزی چوک اور اہم عمارتوں پر اپنا جھنڈا لہرا دیا‘ مقامی جیل سے 500 قیدی بھی چھڑا لئے
قندوز پر قبضے کیلئے طالبان کو غیر ملکی جنگجوئوں اور القاعدہ کی مدد حاصل تھی‘ نائب سربراہ افغان فوج
کابل/ قندوز( مانیٹرنگ ڈیسک، اے این این) افغانستان میں طالبان نے ملک کے پانچویں اہم شہر قندوز پر مکمل قبضہ کرنے کے بعد مرکزی چوک اور اہم عمارتوں پر اپنا جھنڈا لہرا دیا۔ سیکڑوں طالبان عسکریت پسندوں نے کئی اطراف سے شہر پر دھاوا بول دیا۔ مقامی جیل سے500 قیدی چھڑا لئے۔ گھمسان کی لڑائی میں افغان فوجیوں سمیت21 شہری، 25 عسکریت پسند جاں بحق ہوگئے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق پیر کی صبح سیکڑوں طالبان عسکریت پسندوں نے افغانستان میں اسٹریٹجک لحاظ سے اہم شہر قندوز پر کئی اطراف سے حملہ کیا اور شہر کے نصف حصے پر قابض ہوگئے۔ اور انہوں نے مرکزی چوک اور اہم عمارتوں پر اپنا جھنڈا لہرا دیا۔ قندوز میں پولیس کے ترجمان سید سرور حسینی نے کہا کہ عسکریت پسندوں نے مقامی جیل پر قبضہ کرکے5 سو کے قریب قیدیوں کو رہا کرالیا ہے۔ جن میں متعدد طالبان بھی شامل ہیں۔ افغان صوبہ قندوز وسطی اور شمالی افغانستان کو جوڑنے والی شاہراہ پر واقع ہے اور یہ اسٹریٹجک لحاظ سے بہت اہمیت رکھتا ہے۔ ترجمان افغان وزارت داخلہ صادق صدیق کے مطابق 2001 میں افغانستان پر امریکی حملے کے بعد قندوز پہلا بڑا شہر ہے جس پر طالبان قابض ہوگئے ہیں۔ افغان فوج کے نائب سربراہ مراد علی مراد نے غیر ملکی میڈیا کو بتایا کہ قندوز پر قبضے میں طالبان کو غیر ملکی جنگجوئوں اور القاعدہ کی مدد حاصل تھی۔ دوسری جانب طالبان جنگجوئوں نے اپنے پیغام میں حکومت کو خبر دار کیا ہے کہ وہ طالبان کی حقیقت کو تسلیم کرلیں اور ٹھنڈے دماغ سے اپنے ملک اور عوام کے مستقبل کے بارے میں سوچیں۔

Tags: