کے الیکٹرک نے ریاست کے اندر ریاست قائم کر رکھی ہے، پیپلز پارٹی

September 29, 2015 3:45 pm0 commentsViews: 26

غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے ذریعے کراچی میں بڑے حادثے کے غیر ملکی منصوبہ کو عملی جامہ پہنانے کیلئے متحرک ہے
کے الیکٹرک نے نیپرا کے ساتھ ملکر ملکی معیشت کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے، اراکین سندھ اسمبلی
کراچی( اسٹاف رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی کے اراکین صوبائی اسمبلی ساجد جوکھیو‘ شمیم ممتازاور شاہینہ شیر علی نے عید الاضحی کے موقع پر کراچی الیکٹرک کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی الیکٹرک نے ریاست کے اندر ریاست قائم کررکھی ہے اور کراچی میں عید کے دوران بھی غیر اعلانیہ اور طویل دورانیے کی لوڈشیڈنگ کی وجہ سے عوامی اشتعال اور تنائو کی براہ راست ذمہ دار یہی کراچی الیکٹرک ہے جو اپنے غیر ملکی آقائوں کی خوشنودی کیلئے کراچی میں کسی بڑے حادثے کے غیر ملکی منصوبے کو عملی جامہ پہنانے کیلئے متحرک ہے‘ پی پی میڈیا سیل سندھ سے جاری کئے گئے اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ آج کراچی میں نیپرا نے کے الیکٹرک کیخلاف عوامی شکایات پر پبلک ہیئرنگمنعقد کی لیکن عوام کو بولنے کا موقع فراہم نہیں کیا اور نیپرا حکام نے سننے سے انکار کردیا اور پبلک ہیئرنگ میں کراچی الیکٹرک کے نمائندے بھی شریک ہوئے لیکن عوامی نمائندگی صفر کے برابر تھی جس سے یہ ثابت ہوتاہے کہ نیپرا کے حکام کے الیکٹرک کی انتظامیہ سے ملے ہوئے ہیں‘ انہوں نے کہا کہ کراچی الیکٹرک نے نیپرا کے ساتھ ملی بھگت کرکے ملکی معیشت کو جو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے اگر ایسا وہ کسی مغربی ملک میں کرتی تو نہ صرف اس کمپنی کو بلیک لسٹ کردیا جاتا بلکہ اس کمپنی کے لٹیرے ‘کرتا دھرتا جیل میں ہوتے‘ اس سارے ظلم کے برخلاف (ن) لیگ کی حکومت کراچی سے عوام سے بھتہ وصولی کیلئے اسی کراچی الیکٹرک کو استعمال کررہی ہے جو کہ نہایت افسوسناک اور قابل شرم عمل ہے‘ (ن) لیگ کی حکومت کراچی اور سندھ کے عوام کو کوئی ریلیف تو نہیں دے سکی لیکن غریب‘ نادار تنخواہ دار طبقے پر 30 فیصد بجلی کے بلوں میں اضافہ ضرور کردیا ہے۔