سندھ ہائی کورٹ نے تجاوزات کیخلاف کارروائی کی رپورٹ طلب کر لی

September 29, 2015 3:48 pm0 commentsViews: 31

رانا فیض الحسن کی درخواست پر دو رکنی بنچ نے حقائق جاننے کیلئے بلدیاتی اداروں کو احکامات جاری کر دیئے
ندی نالوں پر قائم تجاوزات کیخلاف کارروائی پر عدم اطمینان، فنڈز کی تفصیلات بھی جمع کرانے کا حکم
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائی کورٹ نے متعلقہ اداروں سے ندی نالوں پر قائم تجاوزات کیخلاف کارروائی اور گزشتہ سال فنڈز کے استعمال کی جامع رپورٹس طلب کرلی ہیں۔ فاضل عدالت نے ڈی ایم سی شرقی‘ غربی‘ جنوبی‘ وسطی‘ ملیر اور کورنگی کو نوٹس جاری کرتے ہوئے انہیں آئندہ سماعت تک فوکل پرسن تعینات کرنے کی بھی ہدایت کی ہے‘ پیر کو جسٹس عرفان سعادت خان کی سربراہی میں2 رکنی بنچ نے ندی نالوں پر قائم تجاوزات کے خلاف رانا فیض الحسن کی درخواست کی سماعت کی‘ سماعت کے دوران کے ایم سی کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ ندی نالوں پر تجاوزات کی لیز منسوخ کردی گئی ہے‘ جبکہ تجاوزات کا بھی خاتمہ کیا جارہا ہے‘ اس موقع پر درخواست گزار نے عدالت کو آگاہ کیا کہ عملی طور پرکوئی اقدامات نہیں کئے گئے ہیں اور اگر عدالتی فیصلے پر عملدرآمد ہوا ہے تو رپورٹ طلب کرلی جائیں جس سے تمام حقائق سامنے آجائیں گے‘ جس پر عدالت نے تمام ڈی سی او کو نوٹس جاری کرتے ہوئے ان سے جامع رپورٹس طلب کرتے ہوئے انہیں فوکل پرسن تعینات کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے تنبیہ کی ہے کہ اگر آئندہ سماعت پر عدالت فیصلے پر عمل نہ کیا گیا تو انہیں ذاتی حیثیت میں طلب کیا جائیگا۔

Tags: