کراچی میں جرائم پیشہ افراد کیخلاف آپریشن ہورہا ہے میجر جنرل بلال اکبر آپریشن صرف ایم کیو ایم کے خلاف ہورہا ہے رابطہ کمیٹی

September 29, 2015 3:52 pm0 commentsViews: 22

شہریوں اور تاجربرادری کے تحفظ کیلئے رینجرز ہر وقت تیار ہے کراچی کے حالات بہتر بنانا ہمارا فرض ہے‘ ڈی جی رینجرز کا صنعتکاروں سے خطاب
ڈی جی رینجرز کا بیان حقائق کے منافی ہے‘ ایم کیو ایم کے ہزاروں کارکنوں کو گرفتار اور 50 کو ماورائے عدالت قتل کیا جاچکا ہے‘ رابطہ کمیٹی کا ردعمل
کراچی( مانیٹرنگ ڈیسک) ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل بلال اکبر نے کہا ہے کہ رینجرز شہریوں اور تاجر برادری کے تحفظ کیلئے ہر وقت تیار ہے۔ کراچی کے حالات بہتر کرنا ہمارا فرض ہے۔ کراچی میں صنعتکاروں کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم نیشنل ایکشن پلان کے تحت کام کر رہے ہیں پولیس بھی رینجرز کے ساتھ ملکر جرائم پیشہ افراد کے خلاف کارروائیاں کر رہی ہے۔ آپریشن صرف جرائم پیشہ افراد کے خلاف ہے۔ پولیسنگ کے نظام میں بہتری پر کام ہو رہا ہے کراچی آپریشن کسی ایک جماعت کے خلاف ہونے کا تاثر غلط ہے۔ دوسری طرف متحدہ قومی موومنٹ نے ڈی جی رینجرز کے بیان پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کراچی میں آپریشن صرف اور صرف ایم کیو ایم کے خلاف کیا جا رہا ہے۔ اور کراچی آپریشن کے بارے میں ڈی جی رینجرز سندھ میجر جنرل بلال اکبر کا بیان حقائق کے منافی ہے۔ کمیٹی نے کہا کہ گزشتہ دو سال کے دوران صرف ایم کیو ایم ہی وہ جماعت ہے جس کے ہزاروں کارکنوں کو گرفتار کیا گیا۔ صرف ایم کیو ایم ہی کے پچاس سے زائد کارکنوں کو ماورائے عدالت قتل کیا گیا۔ ایم کیو ایم کے درجنوں کارکنان گرفتاری کے بعد سے آج تک لا پتہ ہیں۔ ایم کیو ایم کے مرکز پر دو مرتبہ چھاپہ مارا گیا۔ ایم کیو ایم ہی کی سیاسی سرگرمیوں پر پابندی عائد ہے۔ رینجرز نے کراچی سمیت سندھ بھر میں خدمت خلق فائونڈیشن کے دفاتر اور مختلف مراکز پر بڑے پیمانے پر چھاپے مارکر نہ صرف ایم کیو ایم کے فلاحی ادارے کو عوام کی جانب سے حاصل ہونے والی ہزاروں کھالیں چھین لیں بلکہ کھالیں جمع کرنے والے متعدد کارکنوں، ذمہ داروں اور کھالیں دینے والے ہمدردوں تک کو گرفتار کیا گیا۔ ان تمام تر حقائق کے باوجود ڈی جی رینجرز میجر جنرل بلال اکبر کا یہ کہنا ہے کہ کراچی آپریشن کسی ایک جماعت کے خلاف نہیں ہو رہا ہے سراسر حقائق کے منافی ہے۔

Tags: