دہشتگردی سائبر کرائم منی لانڈرنگ ایف آئی اے کو گرفتاری اور مقدمات کا خصوصی اختیار مل گیا

September 30, 2015 10:40 pm0 commentsViews: 31

کرپشن کے مقدمات میں گرفتار کسی بھی ملزم کو 90 روز تک تفتیش کیلئے حراست میں رکھا جاسکے گا‘ پورے ملک میں کارروائی کرسکے گا
انسداد دہشتگردی ونگ کو پولیس کے خصوصی اختیارات بھی دے دیئے گئے‘ وزارت داخلہ نے نوٹیفکیشن جاری کردیا
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) ایف آئی اے کسی بھی شخص کو 90 دن کے لئے حراست میں لے سکے گی۔ منی لانڈرنگ دہشت گردی اور سائبر کرائم کے مقدمات درج کرنے کا اختیار مل گیا۔ ایک نجی ٹی وی کے مطابق ایف آئی اے انسداد دہشت گردی ونگ کا دائرہ کار پورا ملک ہوگا اور اسے پولیس جیسے خصوصی اختیارات مل گئے ہیں۔ اسلام آباد میں ایف آئی اے ہیڈ کوارٹر کے ایک دفتر کو تھانے کادرجہ دے دیا گیا، ایف آئی اے کے انسداد دہشت گردی ونگ کو پولیس کے خصوصی اختیارات مل گئے ہیں۔ وزارت داخلہ نے خصوصی اختیارات کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا۔ انسداد دہشت گردی ونگ اسلام آباد دفتر کو تھانے کا درجہ مل گیا۔ جو منی لانڈرنگ ، دہشت گردی اور سائبر کرائم کے کیس درج اور تحقیقات کر سکے گا۔ رپورٹ کے مطابق نوٹیفکیشن ایف آئی اے ایکٹ کے تحت جاری کیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ پروٹیکشن آف پاکستان ایکٹ جو2014ء میں نافذ کیا گیا تھا اس کے تحت بھی ایف آئی اے انسداد دہشت گردی ونگ کے ذریعے ملزمان کو پکڑ سکے گی۔ رپورٹ میں بتایا گیا کہ ایف آئی اے پورے ملک میں اہم مقدمات کی تفتیش کر رہی ہے اور کراچی میں بھی کچھ اہم مقامات کی تفتیش کر رہی ہے چنانچہ اس تناظر میں یہ نوٹیفکیشن جاری کیاگیا ہے تمام قانونی پیچیدگیاں دور ہوجائیں گی۔

Tags: