محمودآباد،ملیراورکورنگی کی حلقہ بندیاں برقرار رکھنے کا فیصلہ

October 1, 2015 3:31 pm0 commentsViews: 21

سندھ ہائی کورٹ کے ڈویژن بنچ نے موجودہ حلقہ بندیوں کے تحت انتخابات کرانے کاحکم دے دیا
حلقہ بندیوں کے دوران کسی حلقے کو دوسرے حلقے میں شامل نہیں کیا گیا،سرکاری وکیل کا عدالت عالیہ میں بیان
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سندھ ہائیکورٹ نے محمود آباد اور کورنگی کی حلقہ بندیوں کے خلاف ایم کیو ایم کی جانب سے دائر درخواستوں کو نمٹاتے ہوئے موجودہ حلقہ بندیوں کو بر قرار کھا ہے۔ فاضل عدالت نے اپنے فیصلے میں حکم دیا ہے کہ انتخابات موجودہ حلقہ بندیوں کے تحت ہی کرائے جائیں اور کسی کو کوئی اعتراض ہے تو وہ متعلقہ فورم سے رجوع کرے۔ بدھ کو چیف جسٹس فیصل عرب پر مشتمل 2 رکنی بنچ نے محمود آباد ملیر اور کورنگی میں ہونے والی حلقہ بندیوں کے خلاف ایم کیو ایم کی جانب سے دائر درخواستوں کی سماعت کے بعد فیصلہ سنایا۔ فاضل عدالت نے اپنے حکم میں مزید قرار دیا ہے کہ موجودہ حلقہ بندیوں کے تحت ہی انتخابات کروائے جائیں۔ سماعت کے موقع پر سرکاری وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ حلقہ بندیوں کے دوران کسی حلقے کو دوسرے حلقے میں شامل نہیں کیا گیا۔ درخواست گزاروں نے اپنے وکیل کے توسط سے دائر کر دہ درخواستوں میں موقف اختیار کیا تھا کہ پی پی کی ایماء پر نئی حلقہ بندیوں کے دوران محمود آباد، ملیر اور کورنگی کے شہری علاقوں کو دیہی اور دیہی کو شہری علاقوں میں شامل کر دیاگیا ہے تا کہ بلدیاتی انتخابات میں مرضی کے نتائج حاصل کئے جا سکیں۔ یہ اقدام غیر آئینی ہے لہٰذا عدالت سے استدعا ہے کہ نئی حلقہ بندیوں کو غیر قانونی قرار دیا جائے۔

Tags: