غیر ملکی سگریٹ کی مانگ میں اضافہ، مقامی کمپنیوں کو خسارہ

October 1, 2015 3:42 pm0 commentsViews: 25

سستی سگریٹ متعارف کرانے کے باوجود مقامی کمپنی خریداروں کو راغب نہ کر سکی
مقامی سگریٹ ساز کمپنیوں کی پروڈکشن کم ہونے پر ڈائون سائزنگ شروع، ہزاروں افراد بے روزگار
کراچی( مارکیٹ رپورٹر) جنرل سیلز ٹیکس میں اضافے اور بڑے پیمانے پر اسمگلنگ کے باعث مقامی سگریٹ ساز کمپنیوں کو خسارے کا سامنا، پروڈکشن میں بتدریج کمی سے سگریٹ کمپنیوں میں ڈائون سائزنگ شروع ہزاروں مزدور بیروزگار، افغانستان اور مشرقی وسطیٰ سے اسمگلنگ کے حجم میں اضافہ۔ تفصیلات کے مطابق سگریٹ مینو فیکچررز کی جانب سے جنرل سیلز ٹیکس میں2 فیصد مزید اضافے کے بعد مقامی سگریٹ ساز کمپنیوں کی جانب سے سگریٹ کے پیکٹ پر10 سے15 روپے اضافے کے باوجود پاکستانی برانڈ سگریٹوں کی فروغ میں25 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔ ادارہ شماریات کے مطابق اس سال جولائی کے مہینے میں مقامی کمپنیوں نے مجموعی طور پر 13 ارب 28کروڑ 40 لاکھ سگریٹ بنائے جبکہ گزشتہ سال اسی مدت کے دوران 14 ارب 33 کروڑ 90 لاکھ سگریٹ تیار کئے گئے۔ لوکل سگریٹ کی قیمتوں میں اضافے کے باعث سگریٹ نوشوں کی بڑی تعداد غیر ملکی سگریٹ کی طرف مائل ہوگئی۔ اس وقت مارکیٹ میں معروف برانڈز کے علاوہ عوامی رجحان کو دیکھتے ہوئے اولمپک، کسان، اولین، برج، پرائڈ، کرکٹ نامی انتہائی سستی پروڈکٹ متعارف کرانے کے باوجود سگریٹ کے مقامی خریداروں کو راغب نہیں کر سکی۔

Tags: