کورنگی میں بھتہ خوروں نے قالین کے گودام کو آگ لگادی مالک کو دل کا دورہ

October 1, 2015 3:47 pm0 commentsViews: 33

بھتہ نہ دینے پر بھتہ خوروں نے گودام کو آگ لگائی‘ مالک کا موقف‘ لاکھوں روپے کے قالین جل کر خاکستر ہوگئے
اورنگی ٹائون‘ گلشن معمار اور شیر شاہ میں گتے کی فیکٹری اور گوداموں میں بھی آگ لگنے کے واقعات میں لاکھوں روپے کا نقصان
کراچی( کرائم رپورٹر) کورنگی میں بھتہ نہ دینے پر قالین کے گودام کو آگ لگادی گئی جس سے لاکھوں روپے کا سامان جل کر خاکستر ہوگیا جبکہ شہر کے مختلف علاقوں میں فیکٹری اور گوداموں میں آتشزدگی کے واقعات میں بھی لاکھوں روپے کا نقصان ہوا ہے‘ اورنگی میں گودام میں قالین رکھے ہوئے تھے‘ جبکہ گودام مالک کو دل کا دورہ پڑنے کے بعد اسپتال میں داخل کرلیا گیا ہے‘ فائر بریگیڈ کی گاڑیوں کی ناقص صورتحال کے باعث آگ بجھانے کا عملہ بروقت نہیں پہنچ سکا‘ تفصیلات کے مطابق کورنگی سو کوارٹر کے قریب گودام میں آگ بھڑک اٹھی اور دیکھتے ہی دیکھتے آگ نے پورے گودام کو لپیٹ میں لے لیا‘ واقعے کی اطلاع ملتے ہی 2 فائر ٹینڈر کو روانہ کیا گیا تاہم آگ کے پھیل جانے کے خدشے کے باعث مزید گاڑیاں اور بائوزر بھی طلب کرلئے گئے‘ ذرائع کا کہنا ہے کہ آگ بجھانے کیلئے مزید گاڑیاں روانہ کی گئیں‘ تاہم 4 گاڑیاں مقررہ مقام پر نہیں پہنچ سکیں۔ گودام مالک عبدالحمید کا کہنا ہے کہ بھتہ نہ دینے پر گودام کو آگ لگائی گئی‘ منگل کو بھتہ مانگا تھا‘ انکا رپر بدھ کو آگ لگادی گئی‘ پولیس کے مطابق گودام مالک کو دل کا دورہ پڑنے کے بعد ادارہ امراض قلب منتقل کردیا گیا ہے‘ ایس ایچ او زمان ٹائون کے مطابق گودام اور گتے کی فیکٹری میں آگ بھڑک اٹھی۔ اطلاع ملتے ہی فائر بریگیڈ کی گاڑیاں موقع پر پہنچ گئیں اور ایک گھنٹے میں آگ پر قابو پالیا‘ الکرم ٹیکسٹائل مل کے گودام میں آگ بھڑک اٹھی واقعے کی اطلاع ملتے ہی فائر بریگیڈ کی تین گاڑیوں نے پہنچ کر آگ پر قابو پالیا‘ نیو کراچی میں ڈی ایم سی کے کنٹریکٹ پر چلنے والے ٹرک میں آگ لگ گئی جس پر آدھے گھنٹے میں قابو پالیا گیا‘ شیر شاہ ہارون آباد گلی نمبر 4 میںبند فیکٹری میں آگ بھڑک اٹھی جس کے نتیجے میں فیکٹری میں موجود لاکھوں روپے کا سامان جل کر خاکستر ہوگیا۔

Tags: