ودہولڈنگ ٹیکس کے خلاف احتجاج تاجرایف بی آر کے دفتر کاگھیرائو کرینگے دھرنا بھی دیاجائیگا

October 2, 2015 12:16 pm0 commentsViews: 38

ملک بھر کی تاجر برادری نے حکومت سے فیصلہ کن جنگ کرنیکی تیاری کرلی،13اکتوبر کو بڑا احتجاج کیاجائیگا،ملک گیر احتجاج کی کال بھی دی جاسکتی ہے
کراچی میں تاجربرادری نے احتجاجی تحریک کامیاب بنانے کے لیے رابطے شروع کردیے، حکومت چاہتی ہے کہ تاجر مستقل ہڑتال پر چلے جائیں،وزیراعظم اور آرمی چیف اسحق ڈار کے تاجر دشمن بیانات کا نوٹس لیں، جمیل پراچہ
ہم گیند اور بلا لے کر آرہے ہیں، ایف بی آر اپنے بائولر تیار کرلے،شاہراہ دستور پر ہمارا میچ ہوگا، حکومت کا تاجر دوست ہونے کا تاثر ختم ہوگیا، اب DO or DIEہوگا، آل پاکستان انجمن تاجران کے عہدیداروں کی پریس کانفرنس
کراچی( کامرس رپورٹر) ملک بھر کی تاجر برادری نے ود ہولڈنگ ٹیکس کے خلاف حکومت کے ساتھ فیصلہ کن جنگ کی تیاری کر لی 13 اکتوبر کو اسلام آباد میں ایف بی آر کے دفتر کا گھیرائو کرنے کا اعلان، احتجاجی دھرنا دیا جائیگا۔ حکومت نے مطالبات تسلیم نہ کئے تو ملک گیر احتجاج اور غیر معینہ مدت کی شٹر ڈائون ہڑتال کی جائے گی۔ کراچی میں تاجروں نے احتجاجی تحریک کامیاب بنانے کیلئے رابطے شروع کر دئیے تفصیلات کے مطابق آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر محمد اجمل بلوچ مرکزی جنرل سیکریٹری نعیم میر، صدر پنجاب محبوب علی سر کی اور دوسرے عہدیداروں نے ود ہولڈنگ ٹیکس کی عدم منسوخی پر 13 اکتوبر کو اسلام آباد ایف بی آر کے دفتر کے گھیرائو کا اعلان کر دیا۔ لاہور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عہدیداروں کا کہنا تھا کہ ملک بھر کے تاجر بینکوں سے لین دین پر کاٹے جانے والے ود ہولڈنگ ٹیکس کومسترد کر چکے ہیں اور اب ایک ہی راستہ ہے کہ ہڑتالیں نہ کی جائیں۔ بلکہ اس سے بڑا کام کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ملک بھر کے ہزاروں تاجر13 اکتوبر کو آبپارہ پہنچیں گے جہاں سے وہ ریلی کی شکل میں ایف بی آر کے دفتر کا گھیرائو کریں گے۔ دھرنا دیں گے۔ اور یہ دھرنا اس وقت تک ختم نہیں ہوگا جب تک نئے چارٹر آف ڈیمانڈ کی منظوری نہیں ہوجاتی۔ انہوں نے کہا ہے کہ تاجر برادری کسی صورت بینکوں سے لین دین پر ود ہولڈنگ ٹیکس ادا نہیں کرے گی۔ آل پاکستان انجمن تاجران کے رہنمائوں نے کہا ہے کہ 13 اکتوبر کو مطالبات منظور نہ ہوئے تو غیر معینہ مدت تک دھرنا جاری رکھا جائے گا اور ملک گیر احتجاج کی کال بھی دیدی جائے گی۔ آل پاکستان انجمن تاجران کے مرکزی جنرل سیکریٹری نعیم میر نے کہا ہے کہ ہم گیند بلا لے کر آرہے ہیں ایف بی آر اپنے بائولر تیار کرے۔ شاہراہ دستور پر ہمارا میچ ہوگا۔ علاوہ ازیں کراچی میں تاجر رہنمائوں نے احتجاجی تحریک کامیاب بنانے کیلئے رابطے شروع کر دئیے ہیں۔ سندھ تاجر اتحاد کے چیئرمین جمیل احمد پراچہ نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت فوری طور پر ود ہولڈنگ ٹیکس کا خاتمہ کرے اور تاجروں کو ریلیف فراہم کرے سندھ تاجر اتحاد سمیت ملک بھر کی تاجر تنظیموں نے تاجروں کو ٹیکس نیٹ میںشامل کرنے اور تاجروں کا ازخود احتساب کرنے کے حوالے سے اقدامات مکمل کرلئے ہیں تاہم اگر حکومتی ہٹ دھرمی ختم نہ ہوئی تو ہم کچھ نہیں کرسکیں گے اور احتجاج پر مجبور ہوجائیں گے۔ وزیر اعظم پاکستان اور آرمی چیف وفاقی وزیر اسحاق ڈارکی جانب سے تاجروں کی دی جانے والی دھمکیوں اور ود ہولڈنگ ٹیکس کے نفاذ کا خاتمہ نہ ہونے جیسے تاجر دشمن بیانات کا سختی سے نوٹس لیں ورنہ تاجر برادری خود ان کے اس طرح کے بیانات کا جواب دینا جانتی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو وفاقی وزیر اسحاق ڈار کی جانب سے دئیے جانے والے بیان کے جواب میں کہی۔ جمیل احمد پراچہ نے کہا کہ تاجر برادری کی جانب سے دو کامیاب ہڑتالوں کے باوجود شاید وفاقی حکومت اور وفاقی وزیر کی آنکھیں نہیں کھلی ہیں اور وہ چاہتے ہیں کہ تاجر برادری مستقل بنیادوں پر ہڑتال پر چلی جائے۔

Tags: