فائرنگ سے چچا بھتیجا سمیت3 افراد ہلاک،3 زخمی ۔ دیگر جرائم و حادثات میں مزید ہلاک وزخمی

October 2, 2015 12:51 pm0 commentsViews: 39

لیاقت آباد میں ڈکیتی میں مزاحمت پر فائرنگ سے چچا بھتیجا ہلاک اور تین زخمی ہو گئے
پولیس نے ملزمان کو گرفتار کر لیا، ملیر میں ملزمان کی فائرنگ سے سیکورٹی گارڈ ہلاک ہو گیا
کراچی(اسٹاف رپورٹر)شہر میں فائرنگ کے واقعات میں چچا بھتیجا اور سیکورٹی گارڈ سمیت3افراد جاں بحق اور تین افراد زخمی ہوگئے ۔پولیس نے چچا بھتیجا کو قتل کرنے کے الزام میں تین ملزما ن کو گرفتار کرلیا ۔تفصیلات کے مطابق سپر مارکیٹ کے علاقے لیاقت آباد بی ایریا میں بدھ اور جمعرات کی درمیانی شب نامعلوم ملزما ن نے دودھ کی دکان پر اندھا دھند فائرنگ کردی اور فرار ہوگئے ،فائرنگ کے نتیجے میں 55سالہ سلیم شہزادولد عبدالحمید اسکا بھتیجا خرم ولد اکرام جاں بحق اور عارف ولد یاور عباس،عظیم ولد ظفر الدین اور سیما اکرام نامی شخص زخمی ہوگئے ،جن کو عباسی شہید اسپتال منتقل کیا گیا ،پولیس کے مطابق رات گئے تک دودھ اور ڈبو کی دکان کھولی ہوئی تھی اس دوران تین ملزمان نعمان ، اقبال اور ذیشان نے ڈکیتی مزاحمت پر فائرنگ کردی تھی جس میں پانچ افراد زخمی ہوگئے ،اسپتال میں دوران علاج چچا اور بھتیجا دم توڑ گئے ،پولیس کے مطابق پولیس نے فوری طور پر علاقے میں ناکہ بندی کرکے ملزمان کی تلاش شرو ع کی تو مذکورہ تین ملزمان کو گرفتار کرکے اسلحہ برآمدکرلیا۔ ملزمان تفتیش کے دوران اعتراف کیا ہے انھوں نے ڈکیتی مزاحمت پر فائرنگ کی تھی ، مقتولین کی نماز جنازہ لیاقت آباد بی ون ایریا ادا کی گئی ،اس دوران علاقے کی دکانیں اور مارکیٹ جزوی طورپر بند تھی جس کی وجہ علاقے میں سخت کشیدگی پائی گئی۔ماڈل کالونی کے علاقے ملیر لیاقت علی خان روڈ پر قائم حبیب بینک کا سیکورٹی گارڈ 30سالہ محمد رفیق ولد خلیل کو نامعلوم ملزم نے فائرنگ کرکے جاں بحق کردیا اورفرارہوگیا،پولیس نے لاش کو تحویل میں لیکر جناح اسپتال منتقل کیا ،ایس ایچ اواسلم پرویز نے بتایاکہ عینی شاہدین نے بیان دیا ہے کہ مقتول محمد رفیق بینک کا شٹر بند کررہا تھا کہ اس دوران ایک نامعلوم ملزم پیدل آیااور سکیورٹی گارڈفیق سے اسکی رئیپٹر چھین کر فرار ہونے لگا جس پر رفیق ملزم کے پیچھے بھاگا تو ملزم نے فائرنگ کردی اور فرارہوگیا ،رفیق شدید زخمی ہوا جو اسپتال جاتے ہوئے دم توڑ گیا ،پولیس کے مطابق مقتول محمدرفیق میٹرو سیکیورٹی کمپنی کا گارڈ تھا اور سعود آباد کا رہائشی تھا ۔پولیس کا کہنا ہے کہ قریب ایک دکان پر کیمرہ نصب تھا جس میں ملزم کی فوٹیج محفوظ ہے پولیس نے فوٹیج اپنی تحویل میں لیکر ملزم کی تلاش شرو ع کردی ۔

سرجانی میں سوٹ کیس سے محنت کش کی تشدد زدہ لاش برآمد
ملزموں نے مقتول کی ٹانگیں کاٹ کر لاش کو جلا دیا، پولیس نے مزید تفتیش شروع کر دی
کراچی(کرائم رپورٹر)سرجانی ٹائون کے علاقے سے سوٹ کیس سے مچھلی فروخت کرنے والے محنت کش کی جھلسی ہوئی لاش ملی ،ملزمان نے قتل کے بعد ٹانگیں کاٹ کر تن سے جدا کردی ۔تفصیلات کے مطابق سرجانی ٹائون کے علاقے سیکٹر 10خان کوچ کے آخری اسٹاپ کے قریب نالے کے قریب پرانے سوٹ کیس سے جھلسی ہوئی 25 سالہ شخص کی لاش ملی ، پولیس نے لاش کی اطلاع ملتے ہی موقع پر پہنچ کر لاش کو تحویل میں لے کر قانونی کارروائی کیلئے عباسی شہید اسپتال پہنچایا، ایس ایچ او امتیاز میر جت نے بتایاکہ مقتول کی شناخت مختیار ولد احمد علی کے نام سے ہوئی ، ایس ایچ او امتیاز میر جٹ کا کہنا ہے کہ مقتول سرجانی ٹائون سیکٹر 10/1 کا رہائشی تھا وہ اپنے والد کے ساتھ لیاقت آباد ڈاکخانہ کے قریب ٹھیلے پر مچھلی فروخت کرتا تھا ، ملزمان نے مقتول کی ٹانگوں کوتیز دھار آلے کی مدد سے جسم سے الگ کردیا اور شناخت چھپانے کیلئے ملزمان نے پیٹرول چھڑک کر آگ لگادی ، لاش کو سوٹ کیس میں ڈالنے کے بعد مذکورہ مقام پر پھینک کر فرار ہوگئے ،وہ شادی شدہ اور ایک بچے کا باپ تھا ، مقتول کا کسی سیاسی یا مذہبی تنظیم سے کوئی تعلق نہیں تھا پولیس اس کیس کے تمام پہلوئوں پر تفتیش کررہی ہے۔

ملیر میں ڈمپررکشہ پر چڑھ گیا 2 طالبات سمیت 3 ہلاک ایک طالبہ کا سر تن سے جدا
خوفناک حادثہ مونوٹیکنیکل کالج کے قریب موڑ کاٹے ہوئے پیش آیا‘ 6 طلبہ سمیت 8 افراد زخمی ہوئے‘ زخمیوں کی حالت تشویشناک
مشتعل افراد کی ڈمپر کو آگ لگانے کی کوشش‘ ڈرائیور فرار‘ علاقہ مکینوں کا شدید احتجاج بجری ڈمپر پر بابندی لگانے کا مطالبہ
کراچی (کرائم رپورٹر) شیدی گوٹھ کے قریب اندہوناک حادثہ ، تیز رفتار ریتی بجری ڈمپر طلبہ سے بھرے رکشہ پر چڑھ گیا، دو طالبات سمیت 3افراد ہلاک ، ایک طالبہ کا سر تن سے جدا ، دوسری طالبہ سمیت2افراد زخمی حالت میں اسپتال جاتے ہوئے ہلاک، 6 طلبہ سمیت 8افراد شدید زخمی، تشویشناک حالت میں جناح اسپتال منتقل،ڈمپر ڈرائیور فرار، سینکڑوں مشتعل افراد کا روڈ پر دھرنا، ڈمپر کو جلانے کی کوشش، سیاسی جماعتوں کے مقامی سربراہ موقع پر پہنچ گئے۔ ریتی بجری کی چوری نے ملیرکو تباہ کردیا، اب ڈمپر انسانی جانوںکاضیاع کر رہے ہیں، ڈمپر تحویل میں لیکر ریتی بجری چوری بند کی جائے:علاقہ مکینوںکا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز دوپہر کے قریب اسکول سے چھٹیاںملنے کے بعد آٹھ سے زائد معصوم طلبہ و طالبات حسب معمول رکشہ میں سوار ہوکرمیمن گوٹھ سے شیدی گوٹھ جا رہے تھے، کہ مونوٹیکنیکل کالج کے قریب موڑ کاٹتے ہوئے سامنے سے آنے والا تیز رفتار ریتی بجری کاڈمپر رکشہ پر چڑھ دوڑا،رکشہ میںسوار طلبہ وطالبات زخمی ہوکر تڑپنے لگے اور ہر طرف خون پھیل گیا، بچوںکی چیخ و پکار پر شیدی گوٹھ و ملحقہ آبادیوں سے بڑی تعداد میں لوگ موقع پر پہنچ گئے ، اسی دوران ڈمپر ڈرائیور فرار ہو گیا،جبکہ طالبات میں سے بارہ سالہ رخسا نہ بنت گل دین جوکھیو کاسر تن سے جدا ہو چکا تھا،اور دوسری پندرہ سالہ طالبہ نادیہ بنت محمداسلم جوکھیو اور 45 سالہ علی محمد خاصخیلی زخمی حالت میں اسپتال لے جاتے ہوئے راستے میں ہی ہلاک ہو گئے، دوسرے زخمی طلبہ راحیل ولد صلاح دین خاصخیلی، اطہر علی ولد محمدوریل خاصخیلی، سجاد علی ولدعبدالعزیز خاصخیلی، اختر علی ولد عبدالعزیز رکشہ ڈرائیور واجد جوکھیو و دیگر کو تشویش ناک حالت میں جناح اسپتال منتقل کیا گیا۔

کورنگی میں فائرنگ سے زخمی بچہ دم توڑ گیا
کراچی( کرائم رپورٹر)کورنگی میں گزشتہ روز فائرنگ کے واقعے میں زخمی بچہ اسپتال میں دم توڑ گیا۔تفصیلات کے مطابق کورنگی کے علاقے تین نمبر بلال چوک نزد کچی آبادی میں گزشتہ شب ملزم ضمیرکی فائرنگ سے زخمی ہونے والا بچہ10 سالہ عبدالاحدولد شمس عالم جناح اسپتال میں دم توڑ گیا،پولیس کے مطابق مذکورہ فائرنگ کا واقعہ ذاتی دشمنی کا نتیجہ ہے،تاہم پولیس واقعے میں ملزم کو تاحال گرفتارنہیں کرسکی ہے۔

اورنگی ٹائون میں فائرنگ سے ایک شخص زخمی
پاکستان بازار کے علاقے اورنگی ٹان بجلی نگر میں فائرنگ کے واقعے میں 32سالہ شخص فیاض احمد ولد احمد بخش زخمی ہو گیا ۔جمشید کوارٹر کے علاقے تین ہٹی پر واقع مزار کے قریب مسلح ملزمان کی فائرنگ سے کار سوار2افراد30سالہ عاطف ولد ابرار اور32سالہ عبدالطیف ولد عثمان زخمی ہو گئے تینوں زخمیوں کو فوری طبی امداد کیلئے اسپتال پہنچایا گیا ۔

کوئٹہ سے کراچی جانیوالی
گاڑی تیزرفتاری کے باعث
الٹ گئی ،دو افراد ہلاک
قلات (نیوز ڈیسک)قلات کے علاقے میں کوئٹہ سے کراچی جانے والی گاڑی تیزرفتاری کے باعث الٹ گئی جس کے نتیجے میں دو افراد ہلاک اوردو زخمی ہوگئے ۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز قلات کے علاقے سوراب میں کوئٹہ سے کراچی جانیوالی گاڑی تیزرفتاری کے باعث قلات کے علاقے سوراب میں ڈرائیورسے بے قابوہوکرالٹ گئی جس کے نتیجے میں گاڑی میں سوار محمدانور اورعارف ہلاک ہوگئے جبکہ دوافراد محمدعلی حاجی محمدشدیدزخمی ہوگئے ۔

 

Tags: