کراچی میں قبرستانوں کے گیٹ تدفین کیلئے بند

October 2, 2015 12:39 pm0 commentsViews: 40

قبرستانوں کے باہر بورڈ آویزاں، تدفین کی سرکاری فیس3500 ہے،15000 روپے وصول کیے جا رہے ہیں
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سخی حسن، عیسیٰ نگری، لیاقت آباد، پاپوش نگر سمیت متعدد قبرستانوں کے گیٹ تدفین کیلئے بند، قبرستانوں کے باہر بورڈ آویزاں، تدفین کیلئے سرکاری فیس3500 کی بجائے15000 روپے وصول کرنے کے بعد جگہ نہ ہونے کا معاملہ ختم ہوجاتا ہے۔ قبرستانوں میں بلدیہ عظمیٰ کی جانب سے انتظامی معاملات سرد خانے کی نذر ہونے کے بعد سیکورٹی، روشنی، پانی کا انتظام بھی ختم اور اوباش اور نشہ کرنے والوں کے ڈیرے، لواحقین دن کے اوقات میں بھی اپنے پیاروں کی قبروں پر فاتحہ خوانی سے محروم تفصیلات کے مطابق بلدیہ کے زیر انتظام قبرستانوں کا مکمل اختیار گورکنوں نے سنبھال رکھا ہے بلدیہ کی جانب سے قبرستانوں میں جگہ نہ ہونے کے بورڈز کی تنصیب کے باوجود ممنوع قبرستانوں میں تدفین کا سلسلہ تو جاری ہے۔ لیکن اس کے لئے مردے کے لواحقین کو ساڑھے تین ہزار روپے کی بجائے پندرہ ہزار روپے ادا کرنے پڑتے ہیں جبکہ کفن کیلئے لٹھے کے دام بھی40 فیصد بڑھنے سے مردانہ کفن 2000 اور زنانہ کفن 2500 روپے کا فروخت ہوتا ہے۔ فلاحی تنظیموں کی جانب سے مفلس اور نادار لواحقین کو بڑے پیمانے پر مفت تقسیم کا نظام موجود نہ ہو تو غریبوں کے پاس تکفین کی رقم نہ ہونے کے باعث اب مردے بے گورو کفن دفنانے کی نوبت آجاتی۔

Tags: