ود ہولڈنگ ٹیکس کے بینک سیکٹر پر منفی اثرات ہیں، میاں شاہد

October 2, 2015 12:40 pm0 commentsViews: 24

عوام اور بینکوں کے مابین رابطہ کمزور ہے جو بینکاری صنعت اور معاشی ترقی کیلئے نقصان دہ ہے
اسٹیٹ بینک کی پالیسیوں کے باعث بینکنگ سیکٹر مستحکم بنیادوں پر استوار ہے، چیئرمین یونائیٹڈ انٹرنیشنل گروپ
کراچی( کامرس رپورٹر) یونائیٹڈ انٹر نیشنل گروپ کے چیئر مین میاں شاہد نے کہا ہے کہ پاکستان میں عوام اور بینکوں کے مابین رابطہ کمزور ہو رہا ہے جس سے بینکاری کی صنعت کے علاوہ معاشی ترقی پر بھی منفی اثرات مرتب ہونگے۔ پاکستان کا بینکنگ سیکٹر اسٹیٹ بینک کی پالیسیوں کی وجہ سے مستحکم بنیادوں پر استوار ہے جو 2008ء کے عالمی بحران سے محفوظ رہا مگر ود ہولڈنگ ٹیکس کے نفاذ سے اس سیکٹر پر منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ میاں شاہد نے کہا کہ ورلڈ بینک کی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق پاکستان میں صرف8.7 فیصد آبادی کا بینک اکائونٹ ہے جبکہ2011 میں بینک اکائونٹ رکھنے والوں کا تناسب 10.3 فیصد ہے۔ دوسری طرف جنوبی ایشیاء کے دیگر ممالک میں2011 میں آبادی کے 32.3 فیصد افراد بینکاری کی سہولت سے فائدہ اٹھا رہے تھے۔ یہ تعداد اب 45 فیصد ہے۔

Tags: