گلشن اقبال میں 2 بنگلوں سمیت نصف درجن مکانات مسمار مکینوں کی ہنگامہ آرائی

October 2, 2015 1:25 pm0 commentsViews: 16

اسسٹنٹ کمشنر گلشن اقبال‘ مختیار کار اور پولیس کی چشتی نگر کے نام پر سرکاری اراضی پر قائم تجاوزات کے خلاف کارروائی
مظاہرین کا کے ڈی اے کے عملے اور مشینری پر پتھرائو‘ پولیس کی جوابی کارروائی سے مظاہرین منتشر‘ یونیورسٹی روڈ پر بھی تجاوزات مسمار
کراچی( اسٹاف رپورٹر) گلشن اقبال بلاک10 میں تجاوزات کیخلاف زبردست کارروائی کے نتیجے میں علاقہ میدان جنگ بن گیا‘ مظاہرین کی جانب سے جلائو گھیرائو کے بعد زبردست پتھرائو کے جواب میں پولیس نے ہوائی فائرنگ شروع کردی ہنگامے اور بلوے کے دوران تین افراد کو گرفتار کرلیا گیا جنہیں تجاوزات کیخلاف آپریشن مکمل کئے جانے کے بعد رات گئے رہا کردیا گیا‘ تجاوزات کیخلاف کارروائی کے نتیجے میں گلشن اقبال 10میں چشتی نگر کے نام پر سرکاری اراضی پر بنائے جانیوالے دو بنگلوں سمیت نصف درجن مکانات منہدم کردیئے گئے‘ اس دوران کے ڈی اے کے ڈئریکٹر انسداد تجاوزات جمیل بلوچ نے بتایا کہ سندھ ہائی کورٹ کی جانب سے احکامات ملنے کے بعد چشتی نگر میں قائم کی گئی تجاوزات کیخلاف کارروائی عمل میں لائی گئی‘ جس کے نتیجے میں دو بڑے بنگلوں سمیت نصف درجن مکانات منہدم کردیئے گئے ہیں‘ تجاوزات کیخلاف آپریشن کے دوران اسسٹنٹ کمشنر گلشن اقبال شوکت اجن مختیار کار نواز سمیت علاقہ پولیس اور کے ڈی اے پولیس کی بھاری نفری موجود تھی‘ تجاوزات کیخلاف کارروائی کے نتیجے میں بڑی تعداد میں متاثرین سرکوں پر نکل آئے ‘جس کی وجہ سے ٹریفک جام ہوگیا‘ احتجاجی مظاہرین نے کے ڈی اے کے افسران و مشینری پر پتھرائو کرتے ہوئے سڑکوں پر ٹائر جلائے ‘ پولیس کی جانب سے جوابی کارروائی کے نتیجے میں احتجاجی مظاہرین منتشر ہوگئے‘ پولیس کی بھاری نفری کی موجودگی میں آپریشن مکمل کرلیا گیا‘ ادھر بلدیہ عظمیٰ کراچی کے محکمہ انسداد تجاوزارت نے ایڈمنسٹریٹر کراچی سجاد حسین عباسی کی ہدایت پر شہر میں تجاوزات کیخلاف مہم جاری رکھتے ہوئے جمعرات کو یونیورسٹی روڈ پرجوہر کمپلیکس کے سامنے سڑک اور فٹ پاتھ پر مرغی کے پنجرے اور گوشت فروشوں کے کیبنز ‘برف ڈپو‘ دکانوں کے چھپرے‘ سبزی کے ٹھیلے‘ فروٹ کے ٹھیلے ‘درجنوں غیر قانونی تجاوزات کو مسمار کردیا‘ جبکہ بڑی تعداد میں پتھارے‘ ہوٹلز اور دیگر تجاوزات کا بھی خاتمہ کردیا۔

Tags: