حکومت چاہتی ہے تاجر مستقل ہڑتال پر چلے جائیں، جمیل پراچہ

October 2, 2015 1:32 pm0 commentsViews: 24

وزیراعظم اور آرمی چیف ود ہولڈنگ ٹیکس سے متعلق اسحاق ڈار کے تاجر دشمن بیانات کا نوٹس لیں
حکومتی ہٹ دھرمی ختم نہ ہوئی تو غیر معینہ مدت کی شٹر ڈائون ہڑتال پر مجبور ہو جائیں گے، چیئرمین سندھ تاجر اتحاد
ٍٍٍٍٍٍکراچی (اسٹاف رپورٹر) سندھ تاجر اتحاد کے چیئرمین جمیل احمد پراچہ نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت فوری طور پر ود ہولڈنگ ٹیکس کا خاتمہ کرے اور تاجروں کو ریلیف فراہم کرے سندھ تاجر اتحاد سمیت ملک بھر کی تاجر تنظیموں نے تاجروں کو ٹیکس نیٹ میںشامل کرنے اور تاجروں کا ازخود احتساب کرنے کے حوالے سے اقدامات مکمل کرلئے ہیں تاہم اگر حکومتی ہٹ دھرمی ختم نہ ہوئی تو ہم کچھ نہیں کرسکیں گے۔ وزیر اعظم پاکستان اور آرمی چیف وفاقی وزیر اسحاق ڈارکی جانب سے تاجروں کی دی جانے والی دھمکیوں اور ود ہولڈنگ ٹیکس کے نفاذ کا خاتمہ نہ ہونے جیسے تاجر دشمن بیانات کا سختی سے نوٹس لیں ورنہ تاجر برادری خود ان کے اس طرح کے بیانات کا جواب دینا جانتی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو وفاقی وزیر اسحاق ڈار کی جانب سے دئیے جانے والے بیان کے جواب میں کہی۔ جمیل احمد پراچہ نے کہا کہ تاجر برادری کی جانب سے دو کامیاب ہڑتالوں کے باوجود شاید وفاقی حکومت اور وفاقی وزیر کی آنکھیں نہیں کھلی ہیں اور وہ چاہتے ہیں کہ تاجر برادری مستقل بنیادوں پر ہڑتال پر چلی جائے۔

Tags: