سرکاری اسپتالوں سے دوائوں کی چوری روکنے کیلئے ٹاسک فورس بنے گی

October 3, 2015 2:49 pm0 commentsViews: 23

گھنائونے جرم میں ملوث افراد کو کیفر کردار تک پہنچائیں گے، صوبائی وزیر صحت جام مہتاب ڈاہر
سرکاری اسپتالوں میں کروڑوں کی دوائیں خریدی جاتی ہیں، چوری میں اسپتالوں کا عملہ بھی ملوث ہے
کراچی ( اسٹاف رپورٹر) صوبائی وزیر صحت جام مہتاب ڈہر نے سرکاری اسپتالوں سے دوائوں کی چوری سے متعلق خبروں کا سخت نوٹس لیتے ہوئے اسپیشل سیکریٹری صحت ڈاکٹر ریاض میمن کو ہدایت کی ہے کہ وہ سرکاری اسپتالوں سے دوائوں کی چوری روکنے کے لئے اسپیشل ٹاسک فورس قائم کریں اور اس گھنائونے جرم میں ملوث افراد کو کیفر کردار تک پہنچائیں یہ ہدایات انہوں نے جمعہ کو اپنے دفتر میں اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے دیں، صوبائی وزیر نے مزید ہدایت دیں کہ دوائوں کی چوری میں ملوث افراد کو گرفتار کرکے ان کے خلاف قانون کے مطابق ایف آئی آر درج کرائی جائیں کیونکہ ایسے افراد کسی بھی رعایت کے مستحق نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری اسپتالوں میں کروڑوں روپے کی ادویات مریضوں کیلئے خریدی جاتی ہیں ان پر صرف مریضوں کا ہی حق ہوتا ہے۔ دوائوں کی چوری میںملوث افراد مریضوں کیلئے تکلیف کے باعث قابل شرم ہے وزیر صحت نے کہا کہ ان کے علم میں یہ بات بھی آئی ہے کہ بعض سرکاری اسپتالوں میں دوائوں کی چوری میں اسپتال کا عملہ بھی ملوث ہوتا ہے جس کے خلاف سخت کارروائی ضروری ہے۔

Tags: