مصنوعی مہم ختم سبزیوں اور دودھ کی قیمتوں میں 12 سے 30 روپے تک کا اضافہ

October 6, 2015 5:16 pm0 commentsViews: 21

ڈپٹی کمشنرز اور اسسٹنٹ کمشنر کی جانب سے منافع خوروں کو گرفتار کرنے کی مہم روکے جانے کے باعث اشیاء کے نرخوں میں ہوشربا اضافہ ہوگیا
سندھ ہائی کورٹ کے احکامات کے باوجود کمشنر دودھ کی سرکاری قیمت پر فروخت یقینی بنانے میں یکسر ناکام ہوگئے
کراچی(سٹی رپورٹر)شہر قائد میں مہنگائی کا جن بے قابو،اشیاء خوردونوش شہریوں کی قوت خرید سے باہر ہوگئیں،ضلعی انتظامیہ کے اعلیٰ افسران اور تاجروں کی ملی بھگت کے باعث ڈپٹی کمشنرز کی منافع خوروں کے خلاف جاری مصنوئی مہم بھی دم توڑ گئی ہے جس کے نتیجے میں ،دودھ،سبزیوں،پھلوں،سمیت تمام اجناس کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ ہوگیا ہے۔ ڈپٹی کمشنرز اور اسسٹنٹ کمشنرز کی جانب سے کسی بھی منصوبہ بندی کے بغیر زائد منافع خوری کے خلاف جاری مہم منافع خوروں کی گرفتاریاں روکے جانے کی وجہ سے ناکامی کا شکار ہوئی ہے ۔ عید الاضحی سے قبل ہی ٹماٹر ،لہسن ،ادرک ،لیموں سمیت دیگر سبزیوں کی قیمتوں میں بھی 25سے 30روپے اضافہ کردیا گیا ہے اور ہرقسم کی سبزی کی زائد قیمتیں وصول کی جارہی ہیں ڈپٹی کمشنرز اور اسسٹنٹ کمشنرز سندھ ہائیکورٹ کے واضح احکامات کے باوجود تاحال دودھ کی سرکاری قیمتوں پر فروخت کو یقینی بنانے میں مکمل طور پر ناکام ہوگئے ہیں اور پورے شہر میں ہائیکورٹ کے فیصلے کے برخلاف دودھ 72روپے فی لیٹر کی بجائے کم از کم 12روپے اضافے کے ساتھ 84روپے فی لیٹر کے حساب سے فروخت کیا جارہا ہے جبکہ پوش علاقوں میں دودھ کی فی لیٹرقیمت 86روپے فی کلو تک وصول کی جارہی ہے کمشنر کراچی شعیب احمد صدیقی متعدد مرتبہ دودھ کی قیمتیں کنٹرول کرنے کی سخت ہدایات دے چکے ہیں مگر ڈپٹی کمشنرز ان کی کسی ہدایات پر عملدرآمد کرانے میں ناکام نظر آتے ہیں۔

Tags: