عوام پر نئے ٹیکس لگانے کی تیاریاں حکومت نے آئی ایم ایف کو نوید سنادی

October 7, 2015 3:20 pm0 commentsViews: 34

انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ(IMF) نے پاکستانی معیشت کو درپیش 7خطرات کی نشاندہی کرادی، بجٹ خسارہ کم کرنے کیلئے مزید ٹیکس لگانے کی ہدایت کی گئی ہے
آئی ایم ایف نے حکومت کو مزید ٹیکس لگانے کی ہدایت دیتے ہوئے تنبیہہ کی ہے کہ اگر حکومت معاشی خطرات پر قابو پانے میں ناکام رہی تو معیشت کو بہتر بنانے کی کاوشیں کامیاب نہیں ہوسکیں گی، پاکستانی حکومت کو سخت اقدامات کرنا ہوں گے
عالمی ادارے کو شک ہے کہ پاکستان نے بجٹ خسارے سے متعلق غلط بیانی کی ہے، سرکاری اداروں کے نقصانات اور سرکلر ڈیٹ کو بجٹ خسارے میں شامل نہیں کیا گیا، آئی ایم ایف کے کنٹری ڈائریکٹر کی پریس بریفنگ
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک/نیٹ نیوز) پاکستانی حکومت نے آئی ایم ایف کے دبائو پر عوام پر مزید ٹیکس لگانے کی تیاریاں کرلی ہیں اور اس سلسلے میں آئی ایم ایف کو نوید بھی سنادی ہے‘ ذرائع کے مطابق انٹر نیشنل مانیٹری فنڈ( آئی ایم ایف) نے رواں مالی سال 2015-16 کا ٹیکس ہدف پورا نہ ہونے کی صورت میں دوران سال نئے ٹیکس لگانے کی ہدایت کی ہے جس پر پاکستانی حکومت نے اس ضمن میں فنڈ کو یقین دہانی کرادی ہے‘ آئی ایم ایف نے پاکستانی معیشت کو درپیش 7 خطرات کی نشاندہی کرتے ہوئے حکومت کو تنبیہ کی ہے کہ اگر موجودہ حکومت ان پر قابو پانے میں ناکام رہی تو معیشت کو سمتحکم بنانے کی کاوشیں کامیاب نہ ہوسکیں گی‘ پاکستانی معیشت کے آٹھویں جائزے کی تفصیلات پر مبنی فنڈ کی رپورٹ کے مطابق رواں مالی سال کیلئے جو ٹیکس وصولی کا ہدف رکھا گیاہے‘ اگر پورا نہ ہوسکا تو آئندہ مالی سال میں جو انکم ٹیکس کی ایگزامینیشنختم کی جانی ہیں وہ رواں مالی سال کی تیسری اور چوتھی سہ ماہی کے دوران ختم کرکے ٹیکس وصولی کو بڑھایا جائیگا تاکہ بجٹ خسارے کو مقررہ ہدف کے اندر اندر رکھا جاسکے۔ رپورٹ کے مطابق روان مالی سال کے دوران مہنگائی کی شرح7.4 فیصد متوقع ہے‘ اجناس کی قیمتوں میں اضافے سے مہنگائی بڑھ سکتی ہے‘ آئی ایم ایف کے کنٹری ڈائریکٹر ہیرالڈ فینگر نے اسلام آباد میں پریس بریفنگ میں بتایا کہ پاکستان میں توانائی اصلاحات اور نجکاری کے عمل میں سست روی پر عالمی ادارے کو شک ہے کہ پاکستان نے بجٹ خسارے سے متعلق غلط بیانی کی‘ انکا کہنا تھا کہ سرکلرڈیٹ جی ڈی پی کے2 فیصد ختم کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے اور کہا ہے کہ بجلی پر سرچارج عائد کرکے315 ارب روپے کے سرکلر ڈیٹ کی ادائیگی اور بینکوں سے لئے گئے قرضوں پر سود کی ادائیگی کے بارے میں قانون سازی میں ممکنہ ناکامی پر پر حکومت بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کرکے پاور سیکٹر کے ریونیو کو برقراررکھے گی‘ اس کے ساتھ حکومت نے11 قومی اداروں کی نجکاری مکمل کرنے کیلئے ڈیڈ لائن پر اتفاق کرلیا ہے جس کے تحت پاکستان اسٹیل کی نجکاری مارچ2016 ‘اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن کے15 فیصد حصص کی نجکاری مارچ2016 اور چھ قومی اداروں کی نجکاری 30جون2016 تک مکمل کی جائیگی۔

Tags: