ٹیکسوں کی بھرمار سے ادائیگیوں کا مسئلہ حل نہیں ہوگا، صدر کراچی چیمبر

October 7, 2015 3:31 pm0 commentsViews: 34

تجارتی حلقوں سے مشاورت کے بجائے انہیں نظرانداز کرنے کی پالیسی جاری ہے، تاجروں کو مسلسل خسارے کا سامناہے
کے الیکٹرک کی زائد بلنگ نے کمر توڑ دی، حالات میں کچھ بہتری کے باوجود کاروبار دوست ماحول کا فقدان ہے، یونس بشیر
کراچی( کامرس رپورٹر) ملکی معاشی صورتحال بھونچال کا شکار ہے۔ ٹیکسوں کی بھر مار سے ادائیگیوں کا مسئلہ حل نہیں ہوگا۔ تجارتی حلقوں سے مشاورت کی بجائے انہیں نظر انداز کرنے کی پالیسی جاری ہے۔ یہ بات کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نو منتخب صدر یونس بشیر نے گزشتہ روز ایک پریس کانفرنس میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ کراچی کے تاجر گزشتہ کئی سالوں سے بد امنی، گیس اور بجلی سمیت پانی کی قلت کے باعث مسلسل خسارے کا سامنا کر رہے ہیں کے الیکٹرک کی جانب سے زائد بلنگ نے تاجروں کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ شہر کی مجموعی صورتحال انتہائی تشویشناک ہے اور عوام بے انتہا مشکلات جھیل رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان حالات میں بہتری کے باوجود ملک میں کاروبار دوست ماحول کا فقدان ہے۔ ایک طرف ایف بی آر کا خوف ہے تو دوسری طرف بھتہ خور سر گرم ہیں۔ صنعتیں بند ہو رہی ہیں پالیسی میں ابہام کے باعث وعدے کے باوجود ریفنڈ کلیمز اب تک ادا نہیں کئے گئے ٹیکس نیٹ کو بڑھانے کے بجائے کاروبار کو نقصان پہنچانے کے اقدامات کئے جا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ ریفنڈ کا قانون ہی غلط ہے کیونکہ اس سے رشوت ستانی میں اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکس چوری خود ایف بی آر کے اہلکار تاجروں کو سکھاتے ہیں۔

Tags: