پالپا کی ہڑتال جاری پی آئی اے کو 50 کروڑ روپے کا نقصان‘ 88 پروازیں منسوخ

October 7, 2015 3:44 pm0 commentsViews: 30

ڈیڈ لاک ختم ہونے کی امیدیں دم توڑ گئیں‘ پالپا کا وفد اسلام آباد سے واپس کراچی آگیا‘ بیمار پائلٹس طبی معائنے کیلئے طلب
90 فیصد سے زائد پائلٹس ہمارے ساتھ ہیں‘ گزشتہ روز 107 پروازوں میں صرف 2 منسوخ ہوئیں‘ چیئرمین پی آئی اے کی پریس کانفرنس
کراچی‘ اسلام آباد( نیوز ڈیسک) پی آئی اے کے پائلٹوں کی ہڑتال کی وجہ سے88 پروازیں منسوخ ہوگئیں جبکہ قومی ایئر لائن کو 50کروڑ کا نقصان ہوا ہے جبکہ مسافر در بدر پھر رہے ہیں‘ پی آئی اے انتظامیہ اور پائلٹوں کی تنظیم پالپا کے درمیان ڈیڈ لاک ختم ہونے کی امیدیں دم توڑ گئی ہیں کیوں کہ مذاکرات کیلئے3 روز سے اسلام آباد میں آیا پالپا کا وفد کراچی واپس چلا گیا ہے‘ سول ایوی ایشن اتھارٹی نے پالپا کی ہڑتال کے دوران پی آئی اے کے21 پائلٹوں اور شریک پائلٹوں کے بیمار ہونے کا نوٹس لیتے ہوئے ان کے طبی معائنے کیلئے میڈیکل بورڈ تشکیل دیدیا ہے‘ پائلٹوں کو گروپس کی صورت میں8‘12 اور 19 اکتوبر کو بورڈ کے سامنے پیش ہونے کی ہدایت کی گئی ہے‘ طبی معائنے کیلئے طلب کئے گئے پائلٹوں اور شریک پائلٹوں میں کیپٹن عبدالمتین بھرگری‘ کیپٹن اورنگزیب‘حشمت خان‘ کیپٹن سید احسن عباس زیدی‘ کیپٹن صلاح الدین جمال‘ کیپٹن محمد امان درانی‘ کیپٹن خرم مغل‘ کیپٹن ندیم مصور‘ عمر رشید و دیگر شامل ہیں۔ چھ روز سے جاری ہڑتال کے بعد پی آئی اے بحران پر قابو پانے میںقدرے کامیاب ہوئی ہے‘ گزشتہ روز صرف 2 پروازیں منسوخ ہوئیں‘ پالپا کے صدر عامر ہاشمی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت پی آئی اے انتظامیہ اور پالپا کے درمیان مذاکرات نہیں چاہتی‘ مزید برآں چیئرمین پی آئی اے ناصر جعفر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پی ائی اے کے90سے زائد پائلٹس حکومت کے ساتھ ہیں حج پروازیں بروقت آرہی ہیں کسی کو کوئی پریشانی نہیں گزشتہ روز 107 پروازیں تھیں صرف دو پروازیں ملتوی ہوئیں ہیں ‘مسافروں کو درپیش مسائل پر معذرت خواہ ہیں‘ پالپا کے تین مطالبات تھے پہلا ڈائریکٹر فلائٹس آپریشن کی تبدیلی چاہتے تھے دوسرا معطل پائلٹس کی دوبارہ بحالی ‘تیسرا مطالبہ پالپا کی مرضی کے مطابق پائلٹس کو ترقی دینا کے مطالبات شامل تھے‘ حکومت کو یہ شرائط قابل قبول نہیں ۔

پالپا کی ہڑتال اور مطالبات غیرقانونی قرار

ہڑتال فی الفور ختم کرکے آپریشن کو بحال کیاجائے، پی آئی اے کی نجکاری کیلئے راہ ہموار نہ کی جائے
پالپا کے اقدامات پی آئی اے کیلئے مہلک ثابت ہوں گے، ایئرلیگ سمیت پی آئی اے کے نمائندہ تنظیموں کا مطالبہ
کراچی( مانیٹرنگ ڈسیک) پی آئی اے ایئر لیگ نے پالپا کی ہڑتال کو غیر قانونی قرار دے دیا اور موقف اختیار کیا ہے کہ پالپا کے غیر قانونی مطالبات کسی طور پر تسلیم نہ کئے جائیں۔ پالپا قومی مفادات کی خاطر ہڑتال کو فوری طور پر ختم کرے۔ ان خیالات کا اظہار ایئر لیگ کے صوبائی صدر راحت اقبال کے زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں کیا گیا۔ اجلاس میں امجد، گلستان، طارق سمیت ایئر پورٹ اور بکنگ آفس کے عہدیداروں نے بھی خطاب کیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہڑتال کے باعث پی آئی اے کو شدید نقصان پہنچ رہا ہے پی آئی اے پہلے ہی سے خسارے میں ہے۔ پی آئی اے کے ملازمین کی نمائندہ تنظیموں نے اپنی ساتھی تنظیم پالپا سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ انسانی ہمدردی اور قومی مفاد میں پی آئی اے کے آپریشن کوفی الفور بحال کرے اور ایسے اقدامات سے گریز کرے جسے جواز بنا کر نجکاری کی راہ ہموار کی جائے۔ پی آئی اے کے ملازمین کی نمائندہ تنظیموں، پی آئی اے سینئر اسٹاف ایسوسی ایشن اٹاپ، کیبن کرایو ایسوسی ایشن اور سوسائٹی آف ایئر کرافٹ انجینئرز کا ایک ہنگامی اجلاس منگل کو ایس ایس کے آفس میں منعقد ہوا۔ جس میںعقیل صدیقی، نجیب الرحمن، نصر اللہ آفریدی، محمد بخش صفدر انجم، مقصود انور، کلب عباس اور ذاکر فاروق نے شرکت کی۔ اجلاس میں پی آئی اے کی موجودہ صورتحال کا جائزہ لیاگیا۔ اور اس امر پر اتفاق کیا گیا کہ پی آئی اے ملازمین اس بات کے حق میں ہیں کہ پی آئی اے کی موجودہ صورتحال اور دیگر وجوہ کی بناء پر احتجاج کی سیاست میں حتمی قدم بڑھانا نہ صرف پی آئی اے کے بقاء کیلئے مہلک ثابت ہوگا بلکہ پی آئی اے کے ملازمین کبھی تکلیف دہ صورتحال سے دو چار ہوسکتے ہیں۔

Tags: