محرم میں علماء کو شر انگیز تقاریر کی اجازت نہیں دینگے، وزیر داخلہ سندھ

October 7, 2015 3:54 pm0 commentsViews: 25

عاشورہ کے دوران جلوسوں کی گزر گاہوں میں پینے کے پانی ، فائر بریگیڈ اور صفائی کا خاص انتظامات کیے جائیں
سیکورٹی کی نگرانی کیلئے کمشنر ہائوس میں الگ کنٹرول قائم کرنے کی ہدایت، اعلیٰ سطح کے اجلاس سے خطاب
کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ کے وزیر داخلہ سہیل انور سیال نے تمام ڈویژنل کمشنرز کو ہدایات دیں کہ محرم الحرام میں کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے بچنے کے لئے پلان تیار کریں۔وہ سندھ سیکرٹریٹ میںعاشورہ محرم کے دوران سندھ پولیس کی جانب سے کئے گئے سیکورٹی انتظامات کے متعلق جائزہ اجلاس کی صدارت کررہے تھے۔اجلاس میں سیکرٹری داخلہ ،آئی جی سندھ پولیس ،تمام ڈویژنل کمشنرز ،ڈی آئی جیزاور دیگر سرکاری افسران نے شرکت کی ۔وزیرداخلہ کوبتایا گیا کہ صوبے میں سیکورٹی انتظامات کی نگرانی کے لیے محکمہ داخلہ میں ایک کنٹرول روم 24گھنٹے کام کررہا ہے۔ وزیر داخلہ نے کمشنر کراچی کو اپنے آفس میں کراچی کے لئے الگ کنٹرول روم قائم کرنے کی ہدایت کی جو کہ پورے شہر کی سیکورٹی کی نگرانی کرے گا ۔ سہیل انور سیال نے کہا کہ کسی بھی مذہبی عالم کو کسی فرقے کے خلاف نفرت شر انگیز کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ انہوں نے پولیس اور انتظامیہ کو ہدایت کی کہ وہ اس بات کو یقینی بنائیں کہ محرم کے جلوس اپنے روایتی راستوں سے گزریں اور مقررہ وقت کے اندر اپنی منزل پر پہنچ کر پر امن طور پر اختتام پذیر ہوں۔انہوں نے ایڈ منسٹریٹر کے ایم سی کو ہدایت کی کہ عاشورہ کے دوران شہر میں فائر بریگیڈ کی موجودگی ،پینے کے صاف پانی کی فراہمی اور صفائی کے بہتر انتظامات کو یقینی بنائے ۔

Tags: