کراچی کے حالات خراب کرنے میں بھارت نواز بلوچ علیحدگی پسند تنظیموں کا ہاتھ

October 7, 2015 4:10 pm0 commentsViews: 1175

عزیر بلوچ‘ بابا لاڈلہ‘ ارشد پپو اور غفار ذکری کے گروپس کے کئی کمانڈر نے تربت میں علیحدگی پسند تنظیموں کے فراری کیمپوں میں تربیت حاصل کی
گرفتار گینگ وار عزیر بلوچ گروپ کے ملیر کے کمانڈر علی نوازبلوچ کا تفتیش کے دوران سنسنی خیز انکشافات
کراچی( نیوز ڈیسک) لیاری او ر دیگر بلوچ آبادیوں میں جاری گینگ وار جنگ اب علاقوں پر قبضے کی جنگ نہیں رہی بلکہ بھارت نواز بلوچ علیحدگی پسند تنظیموں کے کہنے پر لڑی جارہی ہے‘ جس کا مقصد شہر کے امن کو مستقل خراب رکھنا اور سیکورٹی اداروں پر حملے کرکے شہر میں جاری آپریشن کو سبوتاژ کرنا ہے۔ گینگ وار کے عزیر بلوچ‘ بابا لاڈلہ‘ ارشد پپو اور غفار ذکری گروپس کے کئی کمانڈرز بلوچستان میں تربت کے علاقوں میں قائم بھارت نواز بلوچ علیحدگی پسند تنظیموں کے فرار کیمپوں میں تربیت یافتہ دہشت گرد موجود ہیں جو موقع دیکھ کر کارروائی کرتے ہیں۔ یہ انکشاف کائونٹر ٹیررازم ڈپارٹمنٹ‘ ٹو‘ کے ہاتھوں گرفتار گینگ وار کے عزیر گروپ کے ملیر کے کمانڈر علی نواز بلوچ نے دوران تفتیش کئے دوران تفتیش ملزم کا کہنا تھا کہ محرم سے قبل گینگ وار گروپوں میں شامل بلوچ علیحدگی پسند تنظیموں کے تربیت یافتہ دہشت گرد بڑی کارروائی کرسکتے ہیں۔ مذکورہ دہشت گرد کی گرفتاری ظاہر کرتے ہوئے سی ٹی ڈی ٹو کے سربراہ جنید شیخ نے بتایا کہ دہشت گردی کی خصوصی تربیت لینے والے بی ایل اے کے دہشت گرد علی نواز بلوچ کا تعلق عزیر گروپ سے ہے اسے سہیل ڈاڈا کے مارے جانے کے بعد ملیر میں اہم ذمہ داریاں سونپی گئی تھیں‘ جنید شیخ کا کہنا تھا کہ گرفتار ملزم نے انتہائی اہم انکشاف کئے ہیں اور حساس ادارے بھی اس سے تفتیش کررہے ہیں۔

Tags: