فلم کے ذریعے معاشرے کی بڑی خدمت ہو سکتی ہے، پیرزادہ قاسم

October 7, 2015 4:10 pm0 commentsViews: 27

اچھے موضوعات پر فلمیں بنا کر پاکستان کا امیج بلند کر سکتے ہیں، خالد ظفر، کاشف خان اور ایم افراہیم
فلم ٹی وی جرنلسٹس کے نائب صدر کی عید ملن تقریب میں فنکاروں اور صحافیوں کی شرکت
کراچی (کلچرل رپورٹر) معروف دانشور، محقق، شاعر اور ضیا الدین یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر پیر زادہ قاسم رضا صدیقی نے کہا ہے کہ فلمی صنعت کا احیا کراچی سے ہونا خوش آئند ہے۔ اور فلم کے ذریعے معاشرے کی بڑی خدمت ہوسکتی ہے۔ وہ پاکستان فلم ٹی وی جرنلسٹس ایسوسی ایشن کے نائب صدر جنید رضوی کی رہائشگاہ پر منعقد عید ملن کے موقع پر مہمانوں سے گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر ٹی وی فنکار خالد ظفر، کاشف خان، ایاز خان، گلوکار افراہیم، کراچی پریس کلب کی گورننگ باڈی کے رکن کفیل الدین‘ فیضان، عبدالوسیع قریشی، پرویز مظہر، ذیشان صدیقی، راشد نور، لیاقت مغل، غفران خان، علی اصغر، الحاج حنیف خان اور دیگر مہمان موجود تھے۔ پیر زادہ قاسم نے مزید کہا کہ پاکستان میں حکومت کی بے اعتنائی کی باعث فلمی صنعت اور فلم میکنگ کا شعبہ ترقی نہیں کرسکا۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت سرپرستی کرے تو فلم حکومت کے کاموں میں مدد گار ثابت ہوسکتی ہے اور اچھے موضوعات پر فلمیں بنا کر ہم پاکستان کا امیج بلند کرسکتے ہیں۔ معاشرتی برائیوں کی نشاندہی اپنی جگہ لیکن فلم کو اچھے مقاصد کے لیے بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں معروف ادیبوں نے فلم ٹی وی ڈرامے لکھے لیکن فلمی صنعت جیسے ہی بحران کا شکار ہوئی ادیبوں، کہانی نویسوں نے فلمی صنعت سے علیحدگی اختیار کرلی۔ جس کی وجہ سے فلم انڈسٹر ی پر غلط اثرات مرتب ہوئے۔ گلوکار محمد افراہیم نے کہا کہ پاکستانی فلموں کی موسیقی ماضی میں میلوڈی سے بھرپور ہوتی تھی آج کل کے گانے آئٹم نمبر کو مد نظر رکھتے ہوئے بنائے جاتے ہیں پیر زادہ قاسم نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ وہ اپنی تدریسی مصروفیات کے باعث سینما ہائوس جا کر فلم نہیں دیکھ سکے ہیں۔ البتہ کبھی کبھار ٹی وی پر فلم دیکھ لیتا ہوں۔ اس موقع پر مزیدار انٹرٹینمنٹ کے ڈائریکٹر حاجی حنیف خان کو حج کی سعادت حاصل کرنے پر ہار پہنائے اور علی اصغر نے پیر زادہ قاسم کو گلدستہ اور صدر فلم ٹی وی جرنلسٹس ایسوسی ایشن عبدالوسیع قریشی نے بین الاقوامی بینجو نواز محمد عزیز کی کتاب پیر زادہ قاسم کو پیش کی۔