چیئرمین اعلیٰ ثانوی بورڈ کی غیر قانونی سرگرمیوں کا بھانڈا پھوٹ گیا

October 8, 2015 1:36 pm0 commentsViews: 22

ناظم امتحانات عمران خان چشتی نے نتائج میں ردو بدل کرنے کی ویڈیو میڈیا کے سامنے پیش کردی‘ چیئرمین نے جبری طور پر فیل امیدواروں کو پاس کرایا
غیر قانونی کاموں کیلئے مسلسل دبائو ڈال کر ہراساں کررہے ہیں‘ اگر پوزیشن فروخت ہوتیں تو کارپینٹر اور غریب مزدوروں کے بچوں کی پوزیشن نہیں آتی‘ ناظم امتحانات
کراچی( سٹی رپورٹر) اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے ناظم امتحانات محمد عمران خان چشتی نے چیئرمین بورڈ محمداخترغوری کے گورکھ دھندے کا بھانڈا پھوڑ دیاچیرمین کی غیر قانونی کاموں کی ویڈیو میڈیا کے سامنے پیش کردی، چیئرمین نے اختیارات کا ناجائز استعمال کر کے غیرقانونی طور پر نتائج تبدیل کردیئے گئے۔ چیئرمین نے ناظم امتحانات کی عدم موجودگی میں ماتحت عملے سے جبری طور پر فیل اُمیدواروں کو پاس کروادیا، چیئرمین غیر قانونی کاموں کے لئے مسلسل دبائو ڈال رہے ہیں، ماتحت عملے کو اپنے اعلیٰ اثر و رسوخ اور تحقیقاتی اداروں کے افسران سے تعلقات کا حوالہ دے کر ہراساں کررہے ہیں چیئرمین اختر غوری تعلیمی بورڈ میں بیٹھ کر خود کو گو رنر ہائوس میں موجود تصور کرتے ہیں ان باتوں کا انکشاف اُنہوں نے بدھ کو بورڈ کے آڈیٹوریم میں پُرہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ان کے ہمراہ ڈپٹی ناظم امتحانات محمد دبیر، ڈپٹی کنٹرولر زرینہ راشد،افسران و ملازمین بھی موجود تھے۔ محمد عمران خان چشتی نے چیئرمین اختر غوری کی جانب سے کی جانے والی پریس کانفرنس میں لگائے جانے والے تمام تر الزامات کو مسترد اور بے بنیاد قرار دیتے ہوئے بتایا کہ اگر بورڈ میں پوزیشنیں فروخت ہوتی تو کارپینٹر اور درزی کا کام کرنے والے غریب مزدوروں کے بچوں کی پوزیشنیں نہیں آتی۔ جبکہ چیئرمین کی تقرری سے قبل ہی نتائج تیار ہوچکے تھے۔ محمد عمران خان چشتی نے کہا کہ چیئرمین اختر غوری تعلیمی بورڈ میں بیٹھ کر خود کو گو رنر ہائوس میں موجود تصور کرتے ہیں جنہوں نے عوام کے جائز کاموں کے لئے اپنے دروازے کو شجر ممنوعہ بنادیا ہے ایک فائل پر دستخط کرنے میں دو ماہ لگادیتے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ انٹر بورڈ میں پبلک ڈیلنگ ہوتی ہے جس کی مثال شیشے کے گھر جیسی ہے اگر ایک پتھر اندر سے باہر جائے گا تو باہر سے پتھر آئیںگے اُنہوں نے کہا ہم نے چیئرمین کے ساتھ بورڈ کے معاملات بہتر سے بہتر بنانے کے لئے بنانے کے لئے ہرممکن تعاون کیا لیکن چیئرمین اختر غوری ہم پر اعلیٰ حکام کا حوالہ دیکر ہم کو غلط کام کرنے پر دبائو ڈال رہے ہیں۔ عمران چشتی کا کہنا ہے کہ چیئرمین نے اسکروٹنی کے ذریعے 30 کے لگ بھگ اُمیدواروں کے نتائج تبدیل کرنے کے لئے کہا تھا تاہم انکار کرنے پر میری عدم موجودگی میں ماتحت عملے سے جبری طور پر 7 اُمیدواروں کے نتائج تبدیل کرکے اچھے نمبروں مارکس شیٹس جاری کردی جس پر میرے دستخط موجود نہیں ہیں جو کہ غیر قانونی ہے۔ اس موقع میڈیا کے سامنے ڈپٹی کنٹرولر امتحانات محمد دبیر، اسسٹنٹ کنٹرولر اطہر سعید اور سپرنٹنڈنٹ بورڈ اسلم چوہان نے حلفیہ اقرار کرتے ہوئے بتایا کہ چیئرمین اختر غوری نے اپنے عہدے کا ناجائز اختیارات استعمال کرتے ہوئے اُمیداروں کے نتائج تبدیل کروائے اس موقع پر خفیہ کیمرے سے بنائی گئی ویڈیو کلپس بھی دکھائی گئیں جس میں چیئرمین بورڈ اختر غوری تفصیلات دیتے ہوئے اُمیدواروں کے نتائج تبدیل کرنے کے لئے اُن پر مسلسل دبائو بھی ڈال رہے ہیں ۔ محمد عمران خان چشتی نے بتایا کہ اُنہوں نے یہ پریس کانفرنس بہت مجبور ہو کر کی ہے جب کہ وہ جانتے ہیں کہ اس کے بعد اُن کے خلاف کچھ بھی ہوسکتا ہے ۔

سندھ حکومت نے ناظم امتحانات عمران چشتی سمیت4 افسران کو ہٹا دیا
کراچی( مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ حکومت نے انٹر بورڈ کے تنازع کا نوٹس لیتے ہوئے ناظم امتحانات عمران چشتی سمیت4 افسران کو ہٹا دیا، وزیر اعلیٰ ہائوس نے انٹر بورڈ کراچی کے افسران کے مابین تنازع کا نوٹس لیتے ہوئے معاملے کی تفتیش کیلئے حیدر آباد بورڈ کے چیئر مین ڈاکٹر محمد میمن کو انکوائری افسر مقرر کیا گیا ہے۔ جو 3 دن میں رپورٹ جمع کرائیں گے۔

Tags: