آج ممتاز قادری کیخلاف فیصلے پر اکابرین اہلسنت کا اجلاس ہوگا

October 8, 2015 2:08 pm0 commentsViews: 22

فیصلے میں انصاف کے تقاضے پورے نہیں کیے گئے، رہائی کیلئے جدوجہد جاری رکھیں گے، اعجاز قادری
کراچی/اسلام آباد (نیوز ڈیسک) سربراہ پاکستان سُنّی تحریک محمدثروت اعجازقادری نے غازی ممتازحسین قادری کیس سے متعلق سپریم کورٹ کے فیصلے پرردعمل کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ ممتازقادری کی سزائے موت کافیصلہ شریعت اورآئین کی روح کے منافی ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے میںانصاف کے تقاضے پورے نہیں کیے گئے،ہم نظرثانی کیلئے دوبارہ اپیل دائرکرینگے، آج فیصلے پر اکابرین اہلسنّت کا اجلاس ہوگا۔ان کا کہناتھاکہ جس سابق گورنرسلمان تاثیرنے ملعونہ آسیہ کی کھلم کھلاحمایت کی اورواضح طورپر توہین رسالتﷺ کا ارتکاب کیا۔ جب کسی گستاخ کیخلاف کوئی قانون حرکت میں نہیں آئے گاتو ناموس رسالتﷺ کے تحفظ کیلئے کوئی نہ کوئی ممتازقادری ضرورپیداہوگا،ممتاز حسین قادری نے توہین رسالت ﷺپر جس ردّعمل کا مظاہرہ کیا وہ ایمانی غیرت کا تقاضا تھا کیونکہ ایک مسلمان سب کچھ برداشت کرسکتا ہے مگر اپنے نبی کریم ؐ کی شان میں گستاخی برداشت نہیں کرسکتا،غازی ممتازحسین قادری کی رہائی کیلئے شرعی ،اخلاقی اورقانونی جدوجہدجاری رکھیں گے۔