سندھ میں‘ سیاسی جماعتوں کی بلدیاتی انتخابات کے بائیکاٹ کی دھمکی

October 9, 2015 2:45 pm0 commentsViews: 19

آرمی چیف پیپلز پارٹی کو دھاندلی سے روکیں‘ سرکاری وسائل کو بے دریغ استعمال کیا جارہا ہے‘ الیکشن کمیشن سے کوئی امید نہیں
سندھ میں خون خرابہ ہوا تو الیکشن کمیشن ذمہ دار ہوگا‘ ارباب غلام رحیم‘ ذوالفقار مرزا اور دیگر رہنمائوں کی میڈیا سے بات چیت
کراچی ( اسٹاف رپورٹر) سندھ کی مختلف سیاسی جماعتوں اور شخصیات نے بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے صوبائی حکومت پر دھاندلی کا الزام لگاتے ہوئے آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ انتخابات میں مداخلت کریں اور پیپلز پارٹی کو دھاندلی اور عوامی مینڈیٹ چوری کرنے سے روکیں‘ ایسا نہ ہوا تو صوبے میں برے پیمانے پر انارکی پھیلے گی‘ جس کی تمام تر ذمہ داری الیکشن کمیشن اور ریاستی اداروں پر عائد ہوگی۔ حالات اس حد تک خراب ہوگئے ہیں کہ اگر بلدیاتی انتخابات میں فوج اور رینجرز کو تعینات نہیں کیا گیا تو ہم بائیکاٹ کرنے پر مجبور ہوں گے۔ ان خیالات کااظہار جمعرات کو سابق وزرائے اعلیٰ سندھ ڈاکٹر ارباب غلام رحیم‘ لیاقت علی جتوئی‘ سابق وزیر داخلہ ڈاکٹر ذوالفقار مرزا‘ سابق رکن قومی اسمبلی سید ظفر شاہ‘ ارکان سندھ اسمبلی نند کمار‘ شہر یار خان مہر‘ حسنین مرزا‘ رکن قومی اسمبلی لالی مل‘ مسلم لیگ (ن) سندھ کے اسماعیل راہو‘ مسلم لیگ (ن) کے ناراض رہنما امیر بخش بھٹو‘ نیشنل پیپلز پارٹی کے عاقب جتوئی اور دیگر نے الیکشن کمیشن آف سندھ میں صوبائی الیکشن کمشنر سندھ تنویر ذکی سے ملاقات کے بعد میڈیا سے مشترکہ بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنمائوں صوبائی الیکشن کمشنر کو پیپلز پارٹی اور صوبائی حکومت کی جانب سے کی جانیوالی دھاندلی سے آگاہ کیا‘ سابق وزیر اعلیٰ سندھ سید ارباب غلام رحیم نے کہا کہ پیپلز پارٹی کو2013 ء کے انتخابات میں دھاندلی کی گونج اب بھی سنائی دے رہی ہے او رپیپلز پارٹی اب بلدیاتی انتخابات میں بڑے پیمانے پر دھاندلی کرنا چاہ رہی ہے او ر سرکاری وسائل کو بے دریغ استعمال کیا جارہا ہے‘ دھونس اور دھاندلی کی بنیاد پر بڑے پیمانے پر لوگوں کو بلا مقابلہ منتخب کرانے کیلئے کوشش کی جارہی ہیں۔ سابق صوبائی وزیر ذوالفقار مرزا نے کہا کہ ہمیں صرف فوج پر اعتماد ہے۔ تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی لال مل نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات جانبدار ہوتے ہوئی دکھائی نہیں دے رہے ہیں اور ایسا لگ رہا ہے کہ پیپلز پارٹی اور حکومت سندھ نے یلغار کی ہوئی ہے‘ سندھ میں خون خرابہ ہوا الیکشن کمیشن ذمہ دار ہوگا۔ ہم روز اول سے پیپلز پارٹی کی دھاندلی سے آگاہ کرتے رہے ہیں لیکن توجہ نہیں دی گئی ۔ سابق رکن قومی اسمبلی اور (ن) لیگ کے رہنما سید ظفر علی شاہ نے کہا کہ سندھ مین ریٹرننگ افسران کو ڈپٹی کمشنر ز نے تعینات کیا ہوا ہے اور وہ ان ہی کے احکامات بجا لارہے ہیں۔ مسلم لیگ (ن) کے ناراض رہنما امیر بخش بھٹو نے کہا کہ پیپلز پارٹی دھاندلی کے ذریعے الیکشن جیتنا چاہتی ہے۔ ان رہنمائوں نے مطالبہ کیا کہ سندھ بلدیاتی الیکشن تینوں مراحل میں پولنگ اسٹیشن کے اندر اور باہر فوج اور رینجرز تعینات کی جائے۔

Tags: