شہر میں‘ دہشتگردوں کے حملوں میں 2 پولیس اہلکار ہلاک‘2 شدید زخمی

October 9, 2015 2:46 pm0 commentsViews: 16

بہادر آباد میں2 موٹر سائیکل سوار دہشت گردوں نے فائرنگ کرکے ہیڈ کانسٹبل اور کانسٹبل کو شدید زخمی کردیا جو اسپتال لے جاتے ہوئے دم توڑ گئے
گلبہار میں ٹریفک پولیس کے 2 اہلکار فائرنگ میں زخمی ہوگئے‘ میٹھا در میں زیر تعمیر عمارت سے لاش ملی‘ قصبہ کالونی میں فائرنگ سے 2 افراد زخمی
کراچی(کرائم رپورٹر)میٹھادر کے علاقے سے برطرف ٹریفک پولیس اہلکار کی لاش ملی۔تفصیلات کے مطابق میٹھادر تھانے کی حدود آرام باغ ٹی ایم او آفس کیساتھ زیر تعمیر عمارت سے جمعرات کی صبح ایک شخص کی لاش برآمد ہوئی جسکے سول اسپتال منتقل کیا گیا۔ایس ایچ او غزالہ کے مطابق متوفی کی لاش تین سے چار روز پرانی ہے اور اسکی شناخت36سالہ ریحان ولد سرور کے نام سے ہوئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ متوفی ٹریفک پولیس کا اہلکار تھا اور اسے چھ ماہ قبل برطرف کر دیا گیا تھا۔متوفی کی آخری پوسٹنگ جیکسن ٹریفک پولیس سیکشن میں تھی۔ایس ایچ او کے مطابق متوفی کے برطرف ہونے کے بعد اسکی فیملی بھی اسکے ساتھ نہیں رہ رہی تھی اسلیئے اسکے بارے میں زیادہ معلومات نہیں مل سکیں ۔متوفی کا آبائی تعلق فیصل آباد سے تھا۔انہوں نے بتایا کہ لاش پھولی ہوئی ہے اسلیئے پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے کے بعد ہی وجہ موت معلوم ہو سکے گی۔ گلبہار کے علاقے رضویہ محلہ نزدملااحمد حلوائی موڑ کے قریب موٹرسائیکل سوار دو دہشتگردوں نے ڈیوٹی پر تعینات ناظم آباد ٹریفک سیکشن کے دوہیڈ کانسٹیبل 42سالہ مہدی زمان خان ولد نعمت خان اور 40سالہ چن زیب ولد سعید عالم پر اندھا دھند فائرنگ کردی اور فرار ہوگئے ،اس اطلاع پر پولیس اوررینجرز کی نفری جائے وقوعپر پہنچ گئی ،جنہوں نے زخمیوں کو فوری طورپر عباسی شہید اسپتال منتقل کیا ،جہاں ڈی ایس پی ٹریفک شاہد میاں نے بتایا کہ دونوں ہیڈ کانسٹیبل کی حالت خطرے سے باہر ہے دونوں کو ایک ایک گولی لگی ،جن کو آغا خان اسپتال منتقل کردیا گیا ہے ،پولیس کے مطابق مضروب اہلکاروں کے پاس بھی ایم پی فائیو رائفل موجود تھی جو ملزمان زخمی کرنے کے بعد ان سے چھین کر فرارہوگئے ،پولیس کا کہنا ہے کہ مضروب پولیس اہلکار بلٹ پروف جیکٹ پہنے ہوئے تھے ،پولیس نے جائے وقوعہ سے تین نائن ایم ایم پستول کے خول قبضے میں لیکر فرانزک لیبارٹری کیلئے محفوظ کرلئے ۔

Tags: