ماحولیاتی آلودگی سے زمین کا رنگ بدل گیا

October 9, 2015 4:07 pm0 commentsViews: 49

سندھ ہائیکورٹ کا آلودگی پھیلانے والی صنعتوںکیخلاف کارروائی کا حکم
حکومت نے آلودگی پھیلانے والی صنعتوں کو کس قانون کے تحت اجازت دے رکھی ہے، جج کے ریمارکس
حکومت سندھ کو آلودگی پھیلانے والی صنعتوں کے بارے میں نئی رپورٹس پیش کرنے کی ہدایت
اسلام آباد( آن لائن) سپریم کورٹ نے صوبوں کی جانب سے ماحولیاتی آلودگی پھیلانے والی صنعتوں اور دیگر عوامل کے خلاف خاطر خواہ اقدامات نہ کئے جانے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی حکومتوں کو ماحولیاتی آلودگی پھیلانے والی صنعتوں کیخلاف کارروائی کرکے نئی رپورٹس جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔ چیف جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں قائم بنچ نے ماحولیاتی آلودگی کیس کی سماعت کی۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئے کہ سندھ میں ماحولیاتی آلودگی کی وجہ سے زمین کا رنگ تک بدل گیا مگر حکومت نے سپر ہائی وے اور دیگر اہم جگہوں پر قائم آلودگی پھیلانے وای صنعتوں کے خلاف کارروائی نہیں کی، صنعتوں سے مضر صحت دھواں اور دیگر آلودگی پھیل رہی ہے۔ ہم شہریوں کو آلودگی کا شکار نہیں ہونے دینگے۔ جسٹس امیر ہانی مسلم نے کہا کہ سندھ حکومت خدا کا خوف کرے اور آلودگی پھیلانے والی صنعتوں کو کس قانون کے تحت کام کرنے کی اجازت دے رکھی ہے۔ صوبوں کو ماحولیاتی آلودگی کے خلاف جس طرح کے اقدامات کرنے تھے نہیں کر رہے۔ عدالت کے روبرو چاروں صوبوں نے رپورٹ پیش کیں جن پر فاضل بنچ نے عدم اطمینان کا اظہار کیا اور ہدایت کی 6 ہفتوں میں عدالتی حکم کے مطابق جمع کرائی جائے۔

Tags: