پولیس اہلکاروں کے قتل میں ایک ہی گروپ کے ملوث ہونے کا انکشاف

October 10, 2015 4:59 pm0 commentsViews: 24

نیو ٹائون میں دو پولیس اہلکاروں کو جس ہتھیار سے قتل کیا گیا وہ دہشت گردی کی اور بھی وارداتوں میں استعمال ہوچکا ہے
ملیر میں ٹریفک پولیس اہلکار اور عزیز بھٹی میں پیپلز پارٹی کے کارکن کو بھی اس ہتھیار سے قتل کیا گیا‘فرانزک رپورٹ
کراچی( کرائم ڈیسک) شہر میں6 پولیس اہلکار سمیت8 افراد کے قتل میں ایک گروپ ملوث نکلا۔ تفصیلات کے مطابق ایس ایس پی ایسٹ جاوید جسکانی کے مطابق نیو ٹائون میں دہشت گردوں نے جس ہتھیار سے2 پولیس اہلکاروں کو قتل کیا ہے وہ ہتھیار مزید دہشت گردی کی وارداتوں میں بھی استعمال ہو چکا ہے۔ پولیس کو جائے وقوع سے نائن ایم ایم پستول کے 7 خول ملے تھے جس کی مدد سے فزانزک لیبارٹری نے پولیس کو رپورٹ پیش کی ہے کہ یہ اسلحہ ناظم آباد میں پولیس اہلکار شاہ میر، فاروق اور ہیڈ کانسٹیبل غفور اور عزیز بھٹی میں پیپلز پارٹی کے کارکن احسن دانش کے قتل میں استعمال ہو چکا ہے۔ جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ5 پولیس اہلکار سمیت 6 افراد کے قتل میں ایک ہی گروپ ملوث ہے۔ گلبہار میں ٹریفک پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کے واقعے میں استعمال ہونے والی گولیوں کے خول و دیگر 2 واقعات سے میچ کر گئے۔ ذرائع کے مطابق گلبہار میں جمعرات کو ملزمان کی فائرنگ سے 2 ٹریفک پولیس اہلکار مہدی زمان اور چن زیب زخمی ہوئے تھے، پولیس کے مطابق واقعے میں استعمال ہونے والی گولیوں کے خول 5 اکتوبر کو گلستان جوہر میں قتل ہونے والے ذاکر حسین کے واقعے سے میچ کر گئے جبکہ30 ستمبر کو ملیر میں ٹریفک پولیس کے ایس آئی ذوالفقار کو رائی بھی اسی اسلحے سے قتل کیا گیا۔

Tags: