حکومت اور نیپرا کراچی کو پاکستان کا حصہ نہیں سمجھتی، آفاق احمد

October 10, 2015 5:18 pm0 commentsViews: 22

بجلی کی قیمتوں میں کمی کے حوالے سے ایک بار پھر کراچی کو نظر انداز قابل مذمت ہے
تاجر اور صنعت کار برادری کو نیپرا کے خلاف متحد ہو کر احتجاج کرنا چاہیے، وفد سے بات چیت
کراچی( اسٹاف رپورٹر) مہاجر قومی موومنٹ کے چیئرمین آفاق احمد نے بجلی کی قیمتوں میں کمی کے حوالے سے کراچی کو ایک بار پھر نظر انداز کرنے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت اور نیپرا شاید کراچی اور یہاں بسنے والوں کو پاکستان کا حصہ نہیں سمجھتی‘ تب ہی دوہرا معیار اپنایا جارہا ہے‘300 یونٹ سے زیادہ استعمال کے ذمہ دار عوام سے زیادہ کے الیکٹرک کے تیز رفتار میٹر ہیں جن کی وجہ سے شہری مہنگی بجلی استعمال کرنے اور چالیس گز کے مکانوں کا 80 ہزار تک بل ادا کرنے پر مجبور ہیں۔ اپنی رہائش گاہ پر لائنز ایریا سے آنیوالے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے آفاق احمد نے کہا کہ فیول ایڈجسٹمنٹ کا اطلاق کراچی سمیت ملک بھر میں یکساں ہونا چاہئے‘ اگست کے مہینے میں فروخت ہونیوالے10 ارب یونٹ میں بڑا حصہ کراچی کا ہے‘ کراچی کے عوام بجلی کے واجبات کی مد میں اربوں روپے ماہانہ ادا کرتے ہیں تو پھر 2.60 روپے فی یونٹ کمی کا فائدہ انہیں بھی ملنا چاہئے‘ آفاق احمد نے کہا کہ جولائی کیلئے بجلی کی قیمت میں2 روپے 19 پیسے کی کمی اور اب اگست کے لئے2 روپے60 یسے کی کمی سے کراچی کو محروم رکھنا کراچی دشمنی ہے‘ تاجر اور صنعت کار برادری کو نیپرا کیخلاف متحد ہو کر احتجاج کرنا چاہئے۔

Tags: