دو ٹارگٹ کلر گرفتار گرفتار ملزمان کی نشاندہی پر زمین میں دفن اسلحہ برآمد

October 10, 2015 5:20 pm0 commentsViews: 37

صدر پارکنگ پلازہ کے قریب سے گرفتار ملزم کی نشاندہی پر اسلحہ برآمد کیا گیا‘ منگھوپیر سے ملزم گرفتار‘ اسلحہ اور موبائل فونز برآمد
جس ملزم کی نشاندہی پر اسلحہ برآمد ہوا اس کا تعلق ایم کیو ایم سے ہے ایس ایچ او بریگیڈ سمیت متعدد افراد کے قتل میں ملوث ہے
کراچی(کرائم رپورٹر)سی ٹی ڈی آپریشن ون گارڈن نے شہر کے مختلف علاقوں میں کارروائی کرتے ہوئے متحدہ قومی موومنٹ کے ٹارگٹ کلر سمیت دو ٹارگٹ کلروں کو گرفتار کرلیا، گرفتار ملزمان کی نشاندہی پر زمین میں دفن بھاری مقدار میں اسلحہ برآمد کرلیا، گرفتار ملزمان بریگیڈ تھانے کے ایس ایچ او ، حقیقی اور سنی تحریک کے کارکنان سمیت 11 افراد کی ٹارگٹ کلنگ کے علاوہ بھتہ خوری میں بھی ملوث ہیں، تفصیلات کے مطابق سی ڈی آپریشن ون گارڈن کے ایس ایس پی عثمان اعجاز باجوہ نے جمعہ کی صبح اپنے آفس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے خفیہ اطلاع پر صدر پارکنگ پلازہ کے قریب کارروائی کرتے ہوئے ملزم محمد یعقوب عرف ماما کو گرفتار کرکے اسکی نشاندھی پر زمین میں دفن بھاری تعداد میں اسلحہ اور گولیاں برآمد کرلی، جبکہ انہوں نے خفیہ اطلاع پر منگھوپیر روڈ نزد گٹر باغیچہ کے قریب دوسری کارروائی کرتے ہوئے مقابلے کے بعد ملزم محمد عدنان عرف بلو کو گرفتار کرکے اسکے قبضے سے ایک 30 بور پستول اور 10 موبائل فونز برآمد کرلیے ،ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ گرفتار ملزم محمد یعقوب عرف ماماکا تعلق متحدہ قومی موومنٹ کے لائنزیر ایریا سیکٹر سے ہے، ملزم نے دوران تفتیش بتایا کہ ملزم نے اپنے ساتھی وصی حیدر جو ایف بی صنعتی ایریا کے ہاتھوں گرفتار ہوچکا ہے اور دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر سال 2010 میںبریگیڈ تھانے کے ایس ایچ او ناصر الحسن کو قتل کیا، ملزم نے سال 2010 میں محمود آباد کے علاقے میں حقیقی کے جوائنٹ سیکٹر انچارج کو قتل کیا، ملزم نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر سال 2010 میں جٹ لائن میں احمد مگسی گروپ کے کارکن کو قتل کیا، ملزم نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ مل کر سال 2010 میں لائنز ایریا میں سنی تحریک کے دفتر کو آگ لگائی، ملزم نے سال 2010 میں گرفتار ملزم وصی حیدر اور دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر جٹ لائن میں حقیقی کے کارکن عبدالشکور کو قتل کیا، جس کا مقدمہ الزام نمبر 24/2010 تھانہ بریگیڈ میں درج ہے ، ملزم نے گرفتار ملزم وصی حیدر اور دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر سال 2010/2011 میں لکی اسٹار پر ایڈووکیٹ بشیر کو قتل کیا، ملزم نے سال 2011 میں گرفتار ملزم وصی حیدر کے اور دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر جٹ لائن میں رائو عدیل کو بھتہ نہ دینے پر فائرنگ کرکے قتل کیا، جس کا مقدمہ الزام نمبر 86/2011 تھانہ بریگیڈ میں درج ہے، ملزم نے سال 2010 میں جیکب لائن میں سنی تحریک کے کارکن بابر بنٹا کو قتل کیا، ملزم نے گرفتار ملزم وصی حیدر کو دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل سال 2013 میں ایمپریس مارکیٹ میں سپاہ صحابہ کے کارکن عمران کو قتل کیا، جس کا مقدمہ الزام نمبر 37/13 تھانہ بریگیڈ میں درج ہے ، ملزم نے گرفتار ملزم وصی حیدر اور دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر سال 2013 میں لائنز ایریا میں حقیقی کے کارکن عادل معراج کو قتل کیا، گرفتار دوسرے ملزم محمد عدنان عرف بلو نے دوران تفتیش بتایا کہ اس نے سال 2010 میں اپنے دیگر ساتھیوں کے ساتھ مل کر چونا بھٹی رنچھوڑ لائن میں سنی تحریک کا کارکن سعید عرف کانٹرا جو دیگر لوگوں کے ساتھ بیٹھا تھا اس پر فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں سنی تحریک کا کارکن سعید عرف کانڑا اور ایک نامعلوم شخص ہلاک اور ایک عورت سمیت پانچ افراد زخمی ہوئے تھے ، گرفتار ملزمان سے مزید تفتیش کی جارہی ہے ۔

Tags: