اُردوبازار مافیا نے 20 کروڑ روپے کی جعلی میڈیکل کتابیں چھاپ دیں

October 12, 2015 4:38 pm0 commentsViews: 91

میڈیکل کے نئے سیشن کیلئے چھاپی گئیں جعلی کتابوں کو مختلف علاقوں میں بنے گوداموں میں ڈمپ کردیا گیا
جعلی کتابیں ناظم آباد انکوائری آفس کے قریب قائم پریس‘کورنگی اور برنس روڈ کے پریسوں میں چھاپی گئیں
کراچی( نیوز ایجنسیاں) اردو بازارکی جعلی کتب مافیا نے میڈیکل کے دسمبر میں ہونے والے نئے سیشن کے لئے20 کروڑ کی میڈیکل کی جعلی کتب چھاپ لیں۔ میڈیکل کی جعلی کتب اردو بازار کے گوداموں میں ڈمپ کر دی گئی ہیں۔ جعلی میڈیکل کتب چھاپنے والی مافیا کو ایف آئی اے اور اردو بازار ویلفیئر ایسوسی ایشن کی مکمل سرپرستی حاصل ہے۔ تفصیلات کے مطابق انتہائی با خبر ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ اردو بازار کی جعلی کتب مافیا نے میڈیکل کے نئے سیشن کیلئے شہر بھر میں بڑے پیمانے پر جعلی میڈیکل کی کتب چھاپ کر گوداموں میں اسٹاک کر لی ہیں، اہم ذریعے کا کہنا ہے کہ میڈیکل کا نیا سیشن نومبر میں شروع ہونا ہے جس کیلئے جعلی کتب مافیا کی جانب سے6 ماہ قبل جعلی کتب کی تیاری شروع کی گئی اور اکتوبر میں جعلی کتب کی چھپائی مکمل کرکے جعلی کتب کا اسٹاک گوداموں میں بھر لیا گیا ہے۔ اہم ذریعے کا کہنا ہے کہ رواں سال کے میڈیکل سیشن کے لئے جعلی کتب مافیا کی جانب سے میڈیکل سیشن کیلئے جعلی کتب مافیا کی جانب میڈیکل کی لاکھوں تعداد میں جعلی کتب چھاپی گئی ہیں جن کی مالیت20 کروڑ روپے ہے۔ ذریعے کا کہنا ہے کہ شہر میں جعلی کتب مافیا کے7 بڑے ڈیلروں کی جانب سے جعلی کتب چھاپہ گئی ہیں۔ اہم ذریعے کا کہنا ہے کہ میڈیکل کی جعلی کتب ناظم آباد انکوائری آفس کے قریب ایک پرنٹنگ پریس میں چھاپی گئی ہیں جہاں چند ماہ قبل سی ٹی ڈی پولیس نے چھاپہ مار ایک ملزم کو حراست میں لیا تھا اور بعد ازاں ایک ڈی آئی جی کی سفارش پر جعلی کتب چھاپنے والے پریس کے ملازم کو چھوڑ دیا گیا۔ اس کے علاوہ اردو بازار میں قرآن محل کے قریب پرنٹنگ پریس ، کورنگی چمڑا چورنگی کے پرنٹنگ پریس اور برنس روڈ گلی نمبر2 کے ایک مشہور پرنٹنگ پریس میں میڈیکل کی جعلی کتب چھاپی گئی ہیں۔

Tags: