ملک میں ہیپاٹائٹس کے مریضوں کی تعداد ایک کروڑ ہو گئی

October 12, 2015 4:51 pm0 commentsViews: 26

دنیا بھر میں چار سو ملین افراد اس مرض میں مبتلا ہیں جن میں سے ایک تہائی ہیپاٹائٹس کا شکار ہیں، ڈاکٹر اسرار ناصر
کراچی( اسٹاف رپورٹر) ہیپا ٹائٹس سی جگر سے متعلق بیماری ہے۔ ایک وائرس قسم کا جراثیم اس بیماری کا باعث بنتا ہے۔ پاکستان میں ایک کروڑ افراد اس ہیپا ٹائٹس میں مبتلا ہیں مستقبل میں اس مرض میں مزید اضافے کا خدشہ ہے۔ دنیا میں چار سو ملین افراد اس وائرس میں مبتلا ہیں جس میں سے ہیپا ٹائٹس سی کے مریضوں کی تعداد ایک تہائی ہے۔ یہ بات اسسٹنٹ پروفیسر ڈاکٹر اسرار ناصر نے عیسیٰ لیبارٹری شاہ فیصل کالونی کے زیر اہتمام سوک ایسوسی ایشن میڈیکل سینٹر میں ہیپا ٹائٹس کے موضوع پر سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کہی اس موقع پر مہمان خصوصی ڈاکٹر فرح زیدی، ڈاکٹر صبیحہ عیسیٰ، ڈاکٹر شاد عیسیٰ، ڈاکٹر فرحان عیسیٰ، عمران احمد اور دیگر بھی موجود تھے۔ ڈاکٹر اسرار ناصر نے مزید کہا کہ اس وائرس کی1998ء میں پہلی بار تصدیق ہوئی۔ ہیپا ٹائٹس جگر کی سوزش کی بیماری ہے جو ایک وائرس انفیکشن سے جنم لیتی ہے انجکشن کا زیادہ استعمال، آلودہ خون کی منتقلی، ہیپا ٹائٹس میں سی کی علامات میں وزن کی کمی، رنگ پیلا پڑنا، پیٹ میں پانی بھر جانا، اسہال، خون کی قے، بھوک کی کمی ہے، پاکستان میں13.5 فیصد ٹائٹس سی پایا جاتا ہے۔ ہیپا ٹائٹس سی کا علاج ٹیکے سے دی جانے والی دوا، انٹر فیرون سے ہوتا ہے۔ یہ دوا چھ مہینے سے ایک سال تک دی جانی چاہئے۔ ڈاکٹر فرح زیدی نے کہا کہ ہیپا ٹائٹس بی اور سی سے بچائو کیلئے ہمیشہ سیل بند سرنج استعمال کریں پرانے بلیڈ سے اجتناب کریں۔

Tags: